سکھ کمیونٹی ہندو توا آئیڈیالوجی کو چیلنج کرنے کے لئے کھڑی ہو گئی ،امرجیت سنگھ

  سکھ کمیونٹی ہندو توا آئیڈیالوجی کو چیلنج کرنے کے لئے کھڑی ہو گئی ،امرجیت ...

  

  نیویارک(آئی این پی)وائس آف فریڈم کے صدر امرجیت سنگھ نے کہا ہے کہ سکھ کمیونٹی ہندو توا آئیڈیالوجی کو چیلنج کرنے کے لئے کھڑی ہو گئی ہے، پاکستان  سکھوں کی کھل کر  حمایت کرے، نئی دہلی میں لاکھوں سکھ مودی کے خلاف احتجاج کر رہے ہیں مودی کی کسانوں کے خلاف پالیسیوں کو مسترد کرتے ہیں،اتوار کو  سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر سے جاری اپنے ویڈیو پیغام میں ان کا کہنا تھا کہ  ہندوتوا ایجنڈے کے تحت پانچ اگست کا اقدام اٹھایا گیا جس کا مقصد شہریت کا قانون لا کر بیس کروڑ مسلمانوں کو ٹارگٹ کرنا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ کرتارپور راہداری منصوبے سے پاکستان نے سکھوں کے دل جیتے ہیں امید ہے کہ وہ اس معاملے پر بھی آواز بلند کریں گے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ  نئی دہلی کو اس وقت لاکھوں سکھوں نے گھیرا ہوا ہے اور وہ اپنے حقوق کے لیے گزشتہ کئی روز سے سڑکوں پر بیٹھے ہوئے ہیں۔پاکستان ہمارا مکہ مدینہ ہے، سکھوں کے معاملے پر بات کرنا پاکستان کا کینڈا سے زیادہ حق ہے،برطانیہ کے 36ارکان نے سکھوں کے لئے آواز اٹھائی ہے، سکھ قوم کو پاکستان کی حمایت کی ضرورت ہے،کینیڈین وزیراعظم نے بھی ہماری لئے آواز اٹھائی ہے،پاکستان اقوام متحدہ میں سکھوں کی آواز بنے۔

امرجیت سنگھ

مزید :

صفحہ اول -