سندھ کی تہذیب 5ہزار سال قدیم ہے،شیخ امتیاز حسین

سندھ کی تہذیب 5ہزار سال قدیم ہے،شیخ امتیاز حسین

  

کراچی (سٹاف رپورٹر) سندھ کی تہذیب5ہزار سال قدیم ہے انہوں نے کہا کہ کلچر ڈے منانے کا مقصد اس کی اہمیت کو اجاگر کرنا ہے چونکہ موئن جو دڑو اور ہڑپہ کی تہذیب دنیا کی سب سے قدیم تہذیب ہے جو اس وقت کی جدید تہذیب کہلاتی تھی یہ بات روٹری کلب آف کراچی ایونیو کے پریذیڈینٹ شیخ امتیاز حسین نے سندھ کے کلچر ڈے کے موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی اس موقع پرروٹری انٹرنیشنل ڈسٹرکٹ3271کے گورنر پروفیسر ڈاکٹر فرحان عیسیٰ،روٹری کلب آف کراچی بلوز کے چارجڈ پریذیڈینٹ رضوان جعفر،اسسٹنٹ گورنر حنیف خان،ڈسٹرکٹ کونیئر علی حفیظ، روٹری کلب آف کراچی ایونیو کے سینئر وائس پریذیڈینٹ جنید الرحمن،وائس پریذیڈینٹ شازیہ متین، جنرل سیکریٹری افشین عابد،کوآرڈینیٹر فیصل مقصود،عابد حسین،ڈاکٹر صباء شیخ،زوہیب،نعمان صفدر اور دیگر بھی موجود تھے تقریب سے شیخ امتیاز حسین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نئی نسل کو سندھ کی ثقافت سے روشناس کرانا ضروری ہے تاکہ نئی نسل کوسندھ کی قدیم تہذیب اور ثقافت سے واقف ہوسکے انہوں نے کہا کہ چونکہ سندھ کا کلچر محبت اور دوستی کے لازوال رشتے سے جڑاہواہے سندھ دھرتی کے رہنے والوں نے ہمیشہ سندھ دھرتی کی بیرونی ہوا دسِ سے اس کی حفاظت کی ہے اورنہ صرف حفاظت کی بلکہ اس کی خدمت میں بھی کوئی کسر نہ اٹھارکھی شیخ امتیاز حسین نے کہا کہ سندھ نے ہمیشہ میزبانی اور خلوص کے ساتھ سندھ میں آنے والوں کو خوش آمدید کہا اور اپنے ثقافت اور تہذیب کو عام کیاانہوں نے کہا کہ سندھ دھرتی کے رہنے والوں نے ہمیشہ شاہ عبدالطیف کی تعلیمات اور روایات پر عمل کیا شیخ امتیاز حسین نے کہا کہ چونکہ سندھ دھرتی شاہ عبدالطیف بھٹائی کی دھرتی ہے جہاں محبت،خلوص اور مٹھاس کے ساتھ ایسی میزبانی ملتی ہے جس کی پوری دنیا میں کوئی مثال نہیں ملتی۔

مزید :

صفحہ آخر -