خیبرپختونخوا حکومت کا خیبرٹیچنگ ہسپتال میں آکسیجن کی بندش کے باعث جاں بحق ہونے والے مریضوں کے لواحقین کیلئے امداد کااعلان 

خیبرپختونخوا حکومت کا خیبرٹیچنگ ہسپتال میں آکسیجن کی بندش کے باعث جاں بحق ...
خیبرپختونخوا حکومت کا خیبرٹیچنگ ہسپتال میں آکسیجن کی بندش کے باعث جاں بحق ہونے والے مریضوں کے لواحقین کیلئے امداد کااعلان 

  

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)خیبرپختونخوا حکومت نے خیبرٹیچنگ ہسپتال میں آکسیجن کی بندش کے باعث جاں بحق ہونے والے مریضوں کے لواحقین کیلئے امداد کااعلان کردیا۔

معاون خصوصی کامران بنگش نے وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑا کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ کل افسوسناک واقعے میں 6 افراد جاں بحق ہوئے،خیبرٹیچنگ ہسپتال ایکٹ کے تحت خودمختارہے،وزیراعلیٰ نے بورڈآف گورنرزکوابتدائی تحقیقات کاٹاسک دیاہے۔ کامران بنگش نے کہاکہ وعدے کے مطابق 24 گھنٹے میں انکوائری رپورٹ جاری کی گئی،حتمی رپورٹ میں ذمے داروں کیخلاف ایکشن نظرآئےگا ،واقعے کی تفصیلی رپورٹ بھی جاری کریں گے۔ان کاکہناتھا کہ آکسیجن کی بندش سے جاں بحق ہونے والے مریضوں کے لواحقین کو10 ،10 لاکھ روپے دیئے جائیں گے۔

وزیر صحت تیمور اسلم جھگڑا کاکہناتھا کہ خیبرٹیچنگ ہسپتال واقعے پرافسوس ہے،وزیراعلیٰ نے انکوائری رپورٹ طلب کی تھی،انکوائری میں ہسپتال میں غفلت اورلاپرواہی کوبیان کیاگیا،وزیر صحت نے کہاکہ آکسیجن کی کمی ہی واقعے کاسبب بنی ،ساتوں افرادکوابتدائی تحقیقات کے مطابق معطل کیاگیاہے،ان کاکہناتھا کہ جاں بحق افراد کے لواحقین کو انصاف دلاناہوگا،ہسپتال کے آکسیجن نظام کومزیدجدید بنانا ہوگا،21 ویں صدی میں 18 ویں صدی کانظام نہیں چل سکتا،انہوں نے کہاکہ حکومت کی ذمہ داری ہے وہ معاملات کوواضح کرے،خیبرٹیچنگ ہسپتال واقعے سے متعلق تفصیلی رپورٹ 5دن میں آجائےگی۔

مزید :

قومی -علاقائی -خیبرپختون خواہ -پشاور -