کورونا وائرس مردانہ کمزوری کا باعث بن سکتا ہے، معروف ڈاکٹر نے دعویٰ کردیا، مردوں کو پریشان کردیا

کورونا وائرس مردانہ کمزوری کا باعث بن سکتا ہے، معروف ڈاکٹر نے دعویٰ کردیا، ...
کورونا وائرس مردانہ کمزوری کا باعث بن سکتا ہے، معروف ڈاکٹر نے دعویٰ کردیا، مردوں کو پریشان کردیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس پھیپھڑوں سمیت کئی اندرونی اعضاءکو نقصان پہنچاتا ہے اور کئی کیسز میں یہ نقصان طویل مدتی ثابت ہو رہا ہے۔ اب ایک ماہر ڈاکٹر نے اس حوالے سے ایک اور نقصان بتا کرمردوں کو پریشان کر دیا ہے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق ڈاکٹر ڈینا گریسن نے بتایا ہے کہ مردوں میں کورونا وائرس مردانہ کمزوری کا بھی سبب بن رہا ہے۔ کئی ایسے کیسز سامنے آئے ہیں جن میں صحت مند ہونے والے مریض طویل مدت کے لیے عضو مخصوصہ کی ایستادگی کے مسئلے سے دوچار ہوئے ہیں۔

این بی سی سے گفتگو کرتے ہوئے امریکی میڈیکل ڈاکٹر کا کہنا تھا کہ ”میرے خیال میں یہ نئی بات ہے جو ہم کورونا وائرس کے متعلق سیکھ رہے ہیں۔اب تک ہم یہی جانتے تھے کہ یہ وائرس مریضوں کے اعضاءکو متاثر کرتا اور عصبی مسائل کا شکار بناتا ہے لیکن اب ہمیں معلوم ہو رہا ہے کہ یہ مردوں کو مردانہ کمزوری کا بھی شکار بنا سکتا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ وائرس ’ویسکیولیچر‘ میں مسائل پیدا کرتا ہے جس کے نتیجے میں مرد کو عضو مخصوصہ کی ایستادگی کا مسئلہ لاحق ہو جاتا ہے۔“

مزید :

تعلیم و صحت -کورونا وائرس -