ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کو حکومت کیا سہولیات فراہم کر رہی ہے اور اپوزیشن کے احتجاج کا اصل ایجنڈا کیا ہے؟سردار تنویر الیاس نے کھل کر بتا دیا

 ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کو حکومت کیا سہولیات فراہم کر رہی ہے اور ...
 ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کو حکومت کیا سہولیات فراہم کر رہی ہے اور اپوزیشن کے احتجاج کا اصل ایجنڈا کیا ہے؟سردار تنویر الیاس نے کھل کر بتا دیا

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعلیٰ پنجاب کے معاون خصوصی اور چئیرمین پنجاب سرمایہ کاری بورڈ سردار تنویر الیاس خان نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم کےغبارےسےہوانکل چکی،اپوزیشن جماعتیں اپنی کرپشن بچانے کے لئے ملک میں بد امنی اور کورونا پھیلانے کی بجائےمعصوم شہریوں کی جانوں سے مت کھیلے،حکومت نے ملک کی معاشی سمت درست کر دی،حکومتی پالیسیوں کی بدولت غیر ملکی سرمایہ کار پنجاب کا رخ کر رہے ہیں،ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کو مکمل سہولیات اور تحفظ دینے کے لئے وزیر اعلیٰ عثمان بزدار اور ان کی ٹیم دن رات کوشاں ہے،کسی حکومتی ادارے کے اہلکاروں کی جانب سے صوبے میں سرمایہ کاری کی راہ میں روڑے اٹکائے تو سخت اور فوری ایکشن لیا جائے گا،صوبے میں انڈسٹری کو وسعت دینے کے لئے انقلابی اصلاحات جاری ہیں۔  

تفصیلات کےمطابق "ڈیلی پاکستان"سےہونےوالی خصوصی نشست میں سردارتنویرالیاس خان نےاپوزیشن کو تنقیدکانشانہ بناتےہوئےکہاکہ اس وقت عالمی سطح پرکوروناوباءنےاپنےپنجےگاڑھےہوئےہیں،پوری دنیااس موذی مرض سےنمٹنےکےلئےمصروف عمل ہے،وزیراعظم عمران خان کےکوروناسےنمٹنےکےاقدامات کی عالمی سطح پرتحسین کی جارہی ہےتاہم اپوزیشن جماعتیں اپنی کرپشن چھپانےاورلوٹی ہوئی دولت بچانے کے لئے کورونا کی دوسری خطرناک لہر کےدوران لوگوں کی زندگیاں داؤپرلگارہی ہے،اپوزیشن کو چاہئے کہ کورونا سے بچاؤ کے حکومتی ایس او پیز  کی نہ صرف خود پابندی کرے بلکہ اپنے کارکنوں کی زندگیاں عزیز ہیں تو انہیں بھی تلقین کرے کہ وہ غیر ضروری بھیڑ اور مجمع لگانے سے گریز کریں،حکومت مخالف جماعتوں کو حکومت کی معاشی سمت درست ہونے اور معیشت کا پہیہ چلنے پرجو تکلیف ہو رہی ہےاُسے ساری قوم دیکھ رہی ہے،اپوزیشن کے پاس حکومت کی مخالفت اورسیاست کرنے کا بہت وقت پڑا ہے،کورونا کی دوسری خطرناک لہر کے دوران اپوزیشن جماعتیں اپنے کارکنوں کو "قربانی کا بکرا "بنانے سے گریز کریں۔

سردارتنویرالیاس خان نےکہاکہ کوروناوائرس کی عالمگیروباءکےباوجودملک معاشی استحکام کی راہ پرگامزن ہو چکا ہے،حکومتی موثر پالیسیوں کی بدولت عالمی مالیاتی ادارے پاکستان کی اقتصادی پالیسیوں کی تعریف کررہے ہیں،پنجاب میں ملکی و غیر سرمایہ کاروں کی بڑھتی ہوئی دلچسپی اس بات کی عکاس ہے کہ حکومتی"کاروبار دوست"پالیسیوں کا محورمعیشت کی بحالی ہے،راولپنڈی، لاہور، فیصل آباد میں انڈسٹریز اور صنعتوں کو فروغ اور سرمایہ کاروں کو دی جانے والی سہولیات کی ماضی میں مثال نہیں ملتی،حکومتی پالیسیوں کے نتیجے میں ہزاروں افراد کو نہ صرف روزگار میسر ہو گا بلکہ سرمایہ کاروں کے اعتماد میں بھی اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کو سرکاری دفاتر میں خصوصی مراعات فراہم کی جا رہی ہیں ،کسی بھی حکومتی ادارے میں سرکاری اہلکاروں کی جانب سے ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں اور کاروباری افراد کے کاموں میں غیر ضروری رکاوٹوں کو ختم کردیا گیا ہےتاہم کسی بھی شکایت کی صورت میں میرے دفتر کے دروازے 24 گھنٹے کھلے ہیں،اگر کسی اہلکار نے ماضی کی طرح صوبے میں سرمایہ کاری کے فروغ میں رکاوٹیں ڈالنے کی کوشش کی تو ایسے بدعنوان اہلکاروں کے خلاف فوری سخت ترین ایکشن لیتے ہوئے عبرت کی مثال بنایا جائے گااور کسی صورت بدعنوان اہلکاروں کو ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کا اعتماد مجروح کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

سردارتنویرالیاس خان نے کہا کہ حکومت مہنگائی کے دباؤ کوکم کرنے کیلئےاقدامات کر رہی ہے،مصنوعی مہنگائی اور زخیرہ اندوزی کرنے والے عناصر کے خلاف زیرو ٹالرنس پالیسی اپنائی جا رہی ہے،حکومت "ڈنگ ٹپاؤ"کی بجائے لانگ ٹرم پالیسیاں سامنے لا رہی ہے اور جلد ہی ادارہ جاتی اصلاحات کے نتیجے میں عوام کو ریلیف ملتا نظربھی آئے گا،حکومت صوبے میں ٹیکسٹائل،سیمنٹ اور رئیل اسٹیٹ انڈسٹری سمیت صنعتوں کو خصوصی مراعات دے رہی ہے،ہماری معاشی پالیسیوں کی ملکی و غیر ملکی سرمایہ کار  تعریف کر رہے ہیں جبکہ اپوزیشن جماعتوں کے پیٹ میں مروڑ اٹھ رہے ہیں کہ اگر ان پالیسیوں کا تسلسل کامیابی کے ساتھ  جاری رہا تو ان کی سیاست ہمیشہ ہمیشہ کے لئے ختم ہو جائے گی،اسی لئے اپوزیشن جماعتیں کورونا کی دوسری لہر کے دوران عوام کی زندگیاں خطرے میں ڈال رہی ہیں۔

مزید :

بزنس -