استعفوں کی صورت میں ضمنی نہیں نئے انتخابات ہوں گے: سلیم مانڈوی والا 

استعفوں کی صورت میں ضمنی نہیں نئے انتخابات ہوں گے: سلیم مانڈوی والا 
استعفوں کی صورت میں ضمنی نہیں نئے انتخابات ہوں گے: سلیم مانڈوی والا 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے کہا ہے کہ استعفوں کی صورت میں ضمنی انتخاب کے بجائے نئے انتخاب کی طرف جائیں گے۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے پروگرام میں سلیم مانڈوی والا نے  حکومت اور نیب کو شدید ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ ہمارا احتساب ہوتاہے، اثاثے بھی ڈکلیئرڈ ہوتے ہیں، اسی طرح سارےاداروں کا بھی احتساب ہونا چاہیے، میری انویسٹی گیشن ڈیڑھ سال سے چل رہی ہے ضرور کریں لیکن پرائیویٹ بزنس کو نیب سے دور رکھیں۔

ان کا کہنا تھا کہ مانڈوی والا بلڈرز بہت پرانی کمپنی ہے، مجھے بتایا جائے کہ کہاں اور کونسی کرپشن کی ہے؟ کرپشن کی آڑ میں بزنس مین اور پرائیویٹ سیکٹر کوخراب نہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ میں چیئرمین نیب کو بھی خط لکھ چکا ہوں کہ پارلیمنٹیرینز کو بلاضرورت نہ بلائیں، اگر کوئی بات ہے تو نیب چیئرمین سینیٹ کو آگاہ کرے ۔ان کا کہنا تھا کہ چیلنج کرتاہوں کہ نیب عدالت میں بےنامی ثابت کردے۔

ڈپٹی چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ نیب کی حراست میں 80سال کے لوگ بھی موجود ہیں جن کے بارے میں چیئرمین نیب اور وزیراعظم کو بھی آگاہ کر چکا ہوں کہ انسانی حقوق پامال ہورہے ہیں۔ انسانی حقوق کی اسی طرح خلاف ورزی ہوتی رہی تو بین الاقوامی سطح پر جاؤں گا۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -