سموگ کے بڑھتے خدشات، محکمہ ایجوکیشن کی سکولوں کو حفاظتی اقدامات کی ہدایات 

سموگ کے بڑھتے خدشات، محکمہ ایجوکیشن کی سکولوں کو حفاظتی اقدامات کی ...

  

لاہور (لیڈی رپورٹر) سموگ کے بڑھتے خدشات کے پیش نظر محکمہ سکولز ایجوکیشن نے سکولوں کو حفاظتی اقدامات کرنے کی ہدایات جاری کر دیں۔محکمہ سکول ایجوکیشن نے بچوں کو سانس اور گلے کی بیماریوں سے بچانے کیلئے مختلف حفاظقی اقدامات کی پابندی کرنے کا حکم دیا ہے،  پنجاب بھر کے سرکاری و پرائیویٹ سکولوں میں طلبہ اور اساتذہ کو ماسک پہن کر آنے کا حکم دیا گیا، آنکھوں کو سموگ سے بچانے کیلئے عینک کا استعمال کرنے کی ہدایت کی گئی ہے، اساتذہ سموگ کے دوران بچوں کو زیادہ سے زیادہ پانی پینے کی عادت ڈالیں۔مراسلے میں کہاگیا ہے کہ کوڑا کرکٹ کو کسی صورت آگ نہ لگائی جائے، سکول کے کھلے میدانوں میں پانی کا باقاعدہ چھڑکاؤ کیا جائے، بچوں کو آوٹ ڈور سرگرمیاں کم سے کم کروائی جائیں گی، احکامات پر عملدرآمد نہ کرنیوالے سکول سربراہان کیخلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔دوسری جانب طبی ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ حاملہ خواتین کیلئے سموگ انتہائی خطرناک ہے۔دنیا بھرمیں آلودگی میں نمبر وَن شہر لاہور میں سانس، دمے، سینے کا انفیکشن، نزلہ، زکام اور بخار جیسی بیماریاں عام ہو رہی ہیں۔ فضا میں آکسیجن کی کمی کے باعث حاملہ خواتین اور ان کے بچوں کو بھی آکسیجن پوری نہیں ملتی جس کی وجہ سے زچہ و بچہ کو زیادہ مسائل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔طبی ماہرین نے ہدایت کی ہے کہ شہری صبح اورشام کے اوقات میں کھڑکیاں بند رکھیں، چشمے لگائیں اور ماسک پہن کر گھروں سے نکلیں۔

سموگ

مزید :

صفحہ آخر -