رحیم یارخان:خواجہ فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ میں سٹیٹ آف دی آرٹ ریسٹ ہاؤس کا افتتاح، تقریب میں سیاسی، سماجی شخصیات کی شرکت 

 رحیم یارخان:خواجہ فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ میں سٹیٹ آف دی آرٹ ریسٹ ہاؤس ...

  

رحیم یار خان(بیورو رپورٹ)خواجہ فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی میں بنائے گئے سٹیٹ آف دی آرٹ گیسٹ ہاؤس کا افتتاح کردیا گیا۔ گیسٹ ہاؤس کی افتتاحی تقریب میں صنعتی، سماجی، کاروباری اور صحافتی شخصیات نے شرکت کی(بقیہ نمبر18صفحہ6پر)

۔ گیسٹ ہاؤس کا افتتاح وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد سلیمان طاہر نے ممبر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز میاں سجاد علی،  صدر پریس کلب چودھری جاوید اقبال اور دیگر کے ساتھ مل کر کیا۔ اس موقع پر پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ کے سربراہ، رجسٹرار ڈاکٹر محمد صغیر نے شرکا کو گیسٹ ہاؤس اور جامعہ میں مکمل ہوئے دیگر ترقیاتی کاموں پر بریفنگ دی۔ انہوں نے بتایا کہ اس سٹیٹ آف دی آرٹ عمارت سے ملکی و غیر ملکی شخصیات مستفید ہوسکیں گی جب کہ اس سے ہونے والی آمدن سے جامعہ کے وسائل بڑھیں جو طلبہ کی فلاح و بہہبود پر خرچ ہوں گے۔ اپنے خطاب میں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد سلیمان طاہر کا کہنا تھا کہ اس منصوبے کا مقصد خود انحصاری کی جانب ایک قدم آگے بڑھنا ہے۔ ماضی میں جامعہ آنے والے مہمانوں، قومی و بین الاقومی ماہرین کی رہائش کاانتظام ہوٹلز یا گیسٹ ہاؤسز میں کیا جاتا تھا جس سے جامعہ کے اخراجات میں کئی گنا اضافہ ہوجاتا تھا تاہم اس منصوبے سے نہ صرف یونیورسٹی کی بچت ہوگی بلکہ ذریعہ آمدن بھی بنے گا۔انہوں نے کہا کہ اس جامعہ کا مستقبل تابناک ہے۔ یہاں زیر تعلیم بچے صلاحیتوں میں کسی سے کم نہیں ہیں۔ آنے والے وقت میں یہی طلبہ قومی ترقی میں اپنا کردار اداکریں گے۔ تقریب میں شریک معزز مہمانوں نے خواجہ فرید یونیورسٹی کے ترقیاتی منصوبوں کی بروقت تکمیل اور ان کے معیار کی تعریف کی۔ شرکا کا کہنا تھا کہ وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد سلیمان طاہر کی زیر نگرانی خواجہ فرید یونیورسٹی عالمی معیار کی تعلیم کی فراہمی کو یقینی بنانے کے مشن پر عمل پیرا ہے۔ یونیورسٹی نے قومی و بین الاقوامی رینکنگز میں نمایاں مقام حاصل کرنے کے ساتھ انفراسٹرکچر، سپورٹس کمپلیکس، سمارٹ کلاس رومز اور دیگر منصوبوں کے حوالے سے بھی اپنی ایک الگ پہچان بنا لی ہے۔ اس موقع ڈائریکٹر سٹوڈنٹس افیئرز ڈاکٹر اسلم خان، ڈاکٹر بلال طاہر، ڈاکٹر احمد صہیب، ڈاکٹر فرحان چغتائی، ڈاکٹر یاسر نیاز، ڈاکٹر جلات خان، ڈاکٹر عدنان خالق، انور فاروق، ڈاکٹر ثمینہ ثروت، رانا جہاں زیب سمیت فیکلٹی ممبران اور انتظامی افسران کی کثیر تعداد بھی موجود تھی۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -