نشتر، لواحقین کی غلطی سے ایمرجنسی وارڈ کی لفٹ مشین ٹوٹ گئی، تمام افراد محفوظ

نشتر، لواحقین کی غلطی سے ایمرجنسی وارڈ کی لفٹ مشین ٹوٹ گئی، تمام افراد محفوظ

  

ملتان(وقائع نگار)مریض کے لواحقین کی غلطی کے باعث نشتر ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ کی لفٹ مشین ٹوٹ گئی تاہم لفٹ میں سوار تمام افراد معجزانہ طور پر بڑے نقصان سے بچ گئے ایک شخص کو معمولی چوٹیں آئیں اس بارے میں معلوم ہوا ہے کہ گذشتہ روز ایمرجنسی (بقیہ نمبر29صفحہ6پر)

وارڈ میں ڈی جی خان سے ٹریفک حادثے میں زخمی وہنے والے مریض کو لایا گیا جہاں سرجیکل وارڈ کے ڈاکٹرز نے اس کا سی ٹی سکین تجویز کیا اور اس کے لواحقین مریض کو لیکر لفٹ مشین کے پاس گئے تو لفٹ میں پہلے سے موجود لوگوں نے لفٹ کا دروازہ بند کرنے کا بٹن دبا دیا تھا اور مریض کے لواحقین نے ذبردستی سٹریچر پر لیٹے مریض کو لفٹ کے آدھے کھلے دروازے سے اندر کرنے کی کوشش کی اور لفٹ کا دروازہ ٹھیک سے بند ناں ہو سکا جسکی وجہ سے لفٹ کے اندر رکھی فرش پلیٹ الٹ گئی اور تمام مریض نیچے جا گرے جسمیں ایک شخص کو چوٹیں آئیں اس بارے میں ڈائریکٹر ایمرجنسی وارڈ ڈاکٹر امجد چانڈیو نے بتایا ہے کہ لفٹ مشین کے واقعہ کا براہ راست ذمہ دار مریض اور ان کے لواحقین ہیں کیونکہ لفٹ میں گنجائش سے زیادہ مریض آنے اور دروازہ سٹریچر میں پھنسنے کی وجہ سے یہ حادثہ پیش آیا ہے تاہم جس شخص کو چوٹ آئی ہیں یہ وہی مریض ہے جس کے سر پر پہلے سے ہی چوٹ لگی ہوئی تھی اور اس کو سی ٹی سکین کے لئے لے جایا جا رہا تھا اور کسی بھی مریض کو اس حادثے میں کوئی چوٹ نہیں لگی اور لفٹ مشین کو بھی اسی وقت مرمت کروا لیا گیا تھا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -