ٹریول ایجنسی کے لائسنس ریکارڈ میں ردو بدل،اینٹی کرپشن کا نوٹس

ٹریول ایجنسی کے لائسنس ریکارڈ میں ردو بدل،اینٹی کرپشن کا نوٹس

  

لاہور(اپنے نمائندہ سے)تین لاکھ پچاس ہزار روپے رشوت وصولی کا الزام، ٹریول ایجنسی کے لائسنس کے ریکارڈ میں ردوبدل، جعلی چالان فارم کے ذریعے لائسنس تجدید کرنے کا انکشاف، محکمہ اینٹی کرپشن نے ٹورازم کے افسران کو طلب کرلیا، مزید معلوم ہوا ہے کہ محکمہ انسداد رشوت ستانی لاہور ریجن اے میں محمد شہباز امین نامی شہری کی درخواست پر محکمہ اینٹی کرپشن نے ٹورازم ڈ یپا ر ٹمنٹ کے ڈپٹی کنٹرولر حافظ غنضفر علی کے خلاف 3 لا کھ پچاس ہزار روپے رشوت وصولی کے الزام کے تحت تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے سائل نے مزید الزام عائد کیا کہ حسن سلطان نامی شخص کا 2021 کا لائسنس مجھے دیا گیا جس کی آڑ میں 3 لاکھ پچاس ہزار روپے موصول کئے جبکہ اسی لائسنس کو جب دوبارہ 2022میں تجدید کروانے گیا تو بنک گارنٹی اور پچاس ہزار روپے مزید رشوت وصولی کا مطالبہ کیا جارہاہے۔ درخواست پر محکمہ اینٹی کرپشن لاہور ریجن نے ڈپٹی کنٹرولرغنضفر علی اور اسسٹنٹ محمد ریاض کو ریکارڈ سمیت طلب کرلیا ہے دوسری جانب ڈپٹی کنٹرولر ٹوازم غنضفر علی کا کہنا ہے کہ الزامات بے بنیاد ہیں جس میں کوئی حقیقت نہیں  جیسے مرضی انکوئرای کرلیں الزام ثابت نہ ہوگا

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -