اقتدار میں آکر احتساب کا نظام بہتر کریں گے، حکومت کو مزید وقت دینا ملکی معیشت کے ساتھ ظلم ہوگا: عمران خان 

  اقتدار میں آکر احتساب کا نظام بہتر کریں گے، حکومت کو مزید وقت دینا ملکی ...

  

      لاہور (نمائندہ خصوصی) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ این آر او ون اس قوم کو بہت مہنگا پڑا لیکن این آر او ٹو اس سے بھی شرمناک ہے، ہمارے بعض لوگ اسمبلیاں تحلیل کرنے سے گھبرا رہے ہیں مگر انہیں بتایا ہے کہ اس سے ہماری مقبولیت کم نہیں ہو گی، اتحادیوں کی ہر بات ہماری لائن لینتھ پر نہیں ہو سکتی، ہمیں ایسی باتوں کو درگزر کرنا چاہیے، اب دوبارہ آئیں گے تو احتساب کا نظام بہتر کریں گے،عوام سازش سے آنیوالوں سے فوری نجات چاہتے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز اپنی رہائشگاہ زمان پارک میں ملاقات کرنے والے قصور، ننکانہ اور شیخوپورہ سے تعلق رکھنے والے اراکین قومی و صوبائی اسمبلی اور لاہور سے تعلق رکھنے والے کرنٹ افیئرز وی لاگرز سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں وسطی پنجاب کی صدر ڈاکٹر یاسمین راشد، صوبائی وزیر آصف نکئی، رکن قومی اسمبلی سردار طالب نکئی، رکن قومی اسمبلی بریگیڈیئر (ر) راحت امان، صوبائی وزیر سید علی عباس شاہ، رکن قومی اسمبلی سردار عامر ڈوگر، رکن پنجاب اسمبلی خرم اعجاز چھٹہ سمیت دیگر شریک ہوئے۔اجلاس میں اسمبلیوں کی تحلیل اور استعفوں کے معاملے پر مشاورت کی گئی، ارکان قومی و صوبائی اسمبلی نے عمران کو صوبائی اسمبلی کی تحلیل پر اپنے مکمل تعاون کی یقین دہائی کرائی۔ذرائع کے مطابق ارکان نے رائے دی کہ ملکی مسائل کا واحد حل شفاف اور جلد انتخابات ہیں اس موقع پر پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی و ریجنل قائدین بھی موجود تھے۔ دریں اثناء چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ این آر او ون اس قوم کو بہت مہنگا پڑا لیکن این آر او ٹو اس سے بھی شرمناک ہے۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ دو بدمعاش خاندانوں اور ان کے ساتھیوں کی لوٹ مار نے دس برسوں میں قرض چار گنا بڑھا دیا۔عمران خان کا اپنے ٹویٹ میں مزید کہنا تھا کہ 11 سو ارب روپے کی کرپشن کے کیسز کو استثنیٰ دیا جا رہا ہے جو دن دیہاڑے ڈکیتی ہے۔

عمران خان

مزید :

صفحہ اول -