معروف نعت خواں جنید جمشید کو مداحوں سے بچھڑے 6 برس بیت گئے

معروف نعت خواں جنید جمشید کو مداحوں سے بچھڑے 6 برس بیت گئے
معروف نعت خواں جنید جمشید کو مداحوں سے بچھڑے 6 برس بیت گئے

  

  کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)"دل دل پاکستان" جیسے شہرہ آفاق ملی نغمے  سے شہرت کی بلندیوں پر  پہچنے  والے نامور گلوکار ،نعت خواں اورمبلغ جنیدجمشید کوہم سے بچھڑے 6برس بیت گئے ۔

تفصیلا ت کے مطابق نعت خواں  جنید جمشید 3ستمبر1964ءکو کراچی میں پیداہوئے ۔انہوں نے یوینورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی لاہورسے تعلیم حاصل کی ۔جنید جمشید نے  اپنے  کریئر  کا آغاز میوز ک بینڈ "وائٹل سائنز "سے کیا جس کا پہلا البم 1987ءمیں "دل دل پاکستان" نے ہی  انہیں شہرت کی بلندیوں پرپہنچادیا۔2002 میں اپنی چوتھی اور آخری البم کے بعد جنید جمشید کا رحجان اسلامی تعلیمات کی جانب بڑھنے لگا اور ماضی کے پاپ سٹار ایک نعت خواں  اور مبلغ کے طور پر نظر آنے لگے۔2004ءمیں جنید جمشید نے موسیقی کو خیرباد کہہ کر نعت خوانی اور اسلام تبلیغ کاراستہ اپنا لیا۔

ان کی پڑھی گئی نعتوں نے بھی سننے والوں کی سماعتوں میں رس گھولا بالخصوص نوجوان نسل میں ان کی نعتیں بے انتہا مقبول ہوئیں، ان کی پڑھی ہوئی نعت " میرا دل بدل دے " ان کی روحانی کیفیت کی نشاندہی کرتی ہے۔2007 میں جنید جمشید کو 500 بااثرمسلم شخصیات میں شامل کیا گیا، جبکہ 2014 میں انہیں حکومت پاکستان کی جانب سے تمغہ امتیاز سے نوازاگیا.7 دسمبر 2016 کو جنید جمشید  اور انکی اہلیہ  پی آئی اے کے  بدقسمت طیارے میں سوار تھے، جو چترال سے اسلام آباد آتے ہوئے حویلیاں کے قریب گر کر تباہ ہو گیا۔ مگر عشق مجازی سے عشق حقیقی تک کے سفر پر مبنی انکی زندگی نوجوانوں کے لئے ایک مثال کے روپ میں آج بھی تابندہ ہے۔

مزید :

تفریح -