مخالف ملک کا ڈرامہ دیکھنے پر 2 نوجوانوں کو سرعام سزائے موت دیدی گئی 

مخالف ملک کا ڈرامہ دیکھنے پر 2 نوجوانوں کو سرعام سزائے موت دیدی گئی 
مخالف ملک کا ڈرامہ دیکھنے پر 2 نوجوانوں کو سرعام سزائے موت دیدی گئی 

  

پیانگ یانگ(مانیٹرنگ ڈیسک) شمالی کوریا میں مبینہ طور پر امریکہ اور جنوبی کوریا کے ڈرامے دیکھنے کی پاداش میں2 نوجوانوں کو سرعام سزائے موت دے دی گئی۔ برطانوی اخبار "دی انڈیپنڈنٹ" کے مطابق کھلے عام پھانسی کے ذریعے موت کے گھاٹ اتارے جانے والے ان نوجوانوں کی عمریں 16اور 17سال تھیں۔

نوجوانوں کی ملاقات سکول میں ہوئی تھی اور جو ان کی امریکی و جنوبی کورین ڈراموں کی پسندیدگی کی وجہ سے دوستی میں بدل گئی اور دونوں نہ صرف مل کر ڈرامے دیکھتے تھے بلکہ ایک دوسرے کے ساتھ ڈراموں کی ویڈیوز شیئر بھی کرتے تھے۔ نوجوانوں کا تعلق شمالی کوریا کے صوبے ریانگ گانگ سے تھا جہاں انہیں سینکڑوں لوگوں کی موجودگی میں پھانسی دی گئی۔

رپورٹ کے مطابق یہ واقعہ رواں سال اکتوبر میں پیش آیا تاہم یہ خبر اب جا کر منظرعام پر آئی ہے۔ واضح رہے کہ شمالی کوریا میں امریکہ اور جنوبی کوریا کے پراپیگنڈے سے بچنے کے لیے ان کے ڈرامہ سیریلز اور دیگر مواد پر پابندی عائد کی گئی ہے اور خلاف ورزی پر جرمانے، قید اور حتیٰ کہ موت کی سزا بھی دی جاتی ہے۔ اس کے باوجود لوگ بالخصوص جنوبی کورین ڈرامے یوایس بیز میں حاصل کرتے اور چوری چھپے دیکھتے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -