بشریٰ بی بی کی آڈیو لیکس کیخلاف درخواست ؛ ایف آئی اے کو آڈیو کے فرانزک کا حکم 

بشریٰ بی بی کی آڈیو لیکس کیخلاف درخواست ؛ ایف آئی اے کو آڈیو کے فرانزک کا ...
بشریٰ بی بی کی آڈیو لیکس کیخلاف درخواست ؛ ایف آئی اے کو آڈیو کے فرانزک کا حکم 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نے بشریٰ بی بی کی آڈیو لیکس کیخلاف درخواست پر ایف آئی اے آڈیو کے فرانزک کا حکم دیدیا،عدالت نے کہاکہ تحقیقات کی جائیں کہ سب سے پہلے آڈیو کہاں سے جاری ہوئی، عدالت نے ایف آئی اے ،پیمرااور پی ٹی اے کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے  جواب طلب کرلیا۔

نجی ٹی وی چینل دنیا نیوز کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ میں بشریٰ بی بی کی آڈیو لیکس کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی، اسلام آباد ہائیکورٹ کے جج جسٹس بابرستار نے درخواست پر سماعت کی، عدالت نے استفسار کیا کہ درخواست پر رجسٹرارآفس کا کیا اعتراض ہے؟لطیف کھوسہ نے کہاکہ اعتراض ہے کہ الگ درخواست دائر کریں، متفرق درخواست کیسے کر سکتے ہیں۔

لطیف کھوسہ نے کہاکہ وکیل اور موکل کے درمیان گفتگو پر استحقاق ہوتا ہے،جسٹس بابرستار نے کہاکہ آڈیو کون ریکارڈ کر رہا ہے؟لطیف کھوسہ نے کہاکہ سب کو پتہ ہے کون ریکارڈ کرتا ہے،جسٹس بابرستار نے کہاکہ مفروضے پر تو نہیں چل سکتے،لطیف کھوسہ نے کہاکہ یہ میرانہیں پورے ملک کے وکلا کا مسئلہ ہے۔

جسٹس بابر ستار نے استفسار کیاکہ آڈیو سوشل میڈیا پر آئی ہے؟وکیل لطیف کھوسہ نے کہاکہ آڈیو تمام ٹی وی چینلز نے نشر کی،عدالت نے کہاکہ یہ معلوم ہو جائے تو ریلیز کہاں ہوئیں تو پتہ چل سکتا ہے ریکارڈ کس نے کی، عدالت نے درخواست پر عائد اعتراضات ختم کردیئے،عدالت نے کہاکہ پیمرا بتائے لوگوں کی نجی گفتگو کیسے چینلز پر نشرہورہی ہیں،عدالت نے مزید سماعت 11دسمبر تک ملتوی کردی۔