غزہ اور اسرائیل جیسی صورتحال سے بچنا ہوگا، پاکستان اور بھارت ناقابل تعطل مذاکرت شروع کریں: مانی شنکر آئیر

غزہ اور اسرائیل جیسی صورتحال سے بچنا ہوگا، پاکستان اور بھارت ناقابل تعطل ...
 غزہ اور اسرائیل جیسی صورتحال سے بچنا ہوگا، پاکستان اور بھارت ناقابل تعطل مذاکرت شروع کریں: مانی شنکر آئیر

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی کانگریسی لیڈر اور سابق وزیریونین مانی شنکر آئیر نے مودی حکومت پر زور دیا ہے کہ وہ موجودہ صورتحال کے پس منظر میں پاکستان سے بلاتعطل اور ناقابل تعطل مذاکرت شروع کرے.  عسکری لحاظ سے تیار رہنا چاہیے اس سے بھی زیادہ اہم سفارتکاری اور مذاکرات کا اسلحہ ہے ۔ پاکستان اور بھارت کو غزہ اور اسرائیل جیسی صورتحال سے بچنا ہوگا۔ وہ ہریانہ کے دارلحکومت چند ی گڑھ میں ہونے والے ملٹری لٹریچر فیسٹیول سے خطاب کر رہے تھے۔

 مانی شنکر آئیر نے کہا کہ بھارت کو اپنے آپ کو عسکری لحاظ سے تیار رکھنا چاہیے لیکن اس سے بھی زیادہ اہم سفارتکاری اور مذاکرات کا اسلحہ ہے جسے استعمال کرنا چاہیے۔ انہوں نے چین کے حوالے سے سفارشات دیتےہوئے کہا کہ جنگیں صرف اس وقت ہوتی ہیں جب سفارتکاری ناکام ہوجاتی ہے۔ اگر چین اور پاکستان بھارت پر حملے کےلیے متحدہ ہوجاتے ہیں تو پھر بھارت کیلیے مشکل فوجی صورتحال پیدا ہوجائےگی۔پاکستان اور بھارت کو غزہ اور اسرائیل جیسی صورتحال سے بچنا ہوگا۔

"جنگ " کے مطابق اس موقع پر پاکستان میں بھارت کے آخری ہائی کمشنر اجے بساریہ نے پاکستان کو آئی سی یو میں پڑے مریض جیسا قرار دیا جو پچھلے 6 ماہ سے آئی ایم ایف کے قرضوں کے ذریعے مستحکم حالت میں ہے۔ پاکستان نے بھارت سے مذاکرات بند کر دیئے ہیں کیونکہ بھارت نے پلوامہ جیسے حملوں پر ردعمل ظاہر کرنا شروع کر دیا ہے۔