اٹلی کے میوزیم میں رکھے ”مجرموں“کو لواحقین نے واپس مانگ لیا

اٹلی کے میوزیم میں رکھے ”مجرموں“کو لواحقین نے واپس مانگ لیا
اٹلی کے میوزیم میں رکھے ”مجرموں“کو لواحقین نے واپس مانگ لیا

  

روم (مانیٹرنگ ڈیسک) ہزاروں سال پہلے اٹلی کے میوزیم میں رکھے گئے جرائم میں ملوث افراد کے ڈھانچے اور کھوپڑیاں لواحقین نے واپس مانگ لی ہیں تاہم انتظامیہ نے انکار کردیاہے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق 1871ءمیں جرم کی دنیا کے مشہور شخصیات کے ڈھانچوں کو اٹلی کے شہر تیورن میں واقع ”لومبروزو میوزیم “میں رکھا گیا ہے۔ ماہر نفسیات اور معالج لومبروزو نے ان جرائم پیشہ لوگوں کے ڈھانچوں اور کھوپڑیاں پر ایک صدی قبل تحقیق کی جس کے بعد ان ڈھانچوں کو میوزیم میں رکھ دیا گیااوراب ہزاروں سال بعد ان مجرموں کے لواحقین اپنے آباو¿ و اجداد کے ڈھانچوں کو مذہبی رسومات کی ادائیگی اور دفن کرنے کے لئے واپس مانگ رہے ہیں۔انتظامیہ کا کہنا ہے کہ وہ لومبروزو کی تحقیق اور کاوشوں کو لواحقین کو واپس نہیں دے سکتے۔لومبروزو کی تحقیق کے مطابق جرائم پیشہ افراد کووقت اورحالات مجرم نہیں بنا تے بلکہ یہ قدرتی طور پر برائیوں کے ساتھ پیدا کئے جاتے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس