شاہ زیب قتل کیس کا مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی بالغ ، تعلیمی ریکارڈ لاہور کے ایک ادارے سے بھی طلب: رپورٹ

شاہ زیب قتل کیس کا مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی بالغ ، تعلیمی ریکارڈ لاہور کے ایک ...
شاہ زیب قتل کیس کا مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی بالغ ، تعلیمی ریکارڈ لاہور کے ایک ادارے سے بھی طلب: رپورٹ

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی کی میڈیکل رپورٹ آگئی ہے جو نو فروری کو عدالت میں پیش کی جائے گی جس کے مطابق ملزم بالغ ، بتیس دانت اور عقل داڑھ بھی ہے جبکہ دوسری طرف تفتیشی ٹیم نے ایچی سن سکول لاہور سے ملزم کا ریکارڈ طلب کرلیاہے ۔مقامی میڈیا کے مطابق شاہ زیب قتل کیس کے نامزدملزم شاہ رخ جتوئی کی عمر کے تعین کے لئے عدالتی حکم پر میڈیکل بورڈ ازسرنو تشکیل دیا گیا۔ سروسز ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر محمد توفیق کے مطابق طبی معائنے میں شاہ رخ جتوئی کے چھ ایکسرے کئے گئے ہیں۔بورڈ ممبران کے مطابق اکیس جنوری کو شاہ رخ جتوئی کے ہوئے طبی معائنے کی رپورٹ بھی طلب کی ہے جس میں شاہ رخ کی عمر سترہ سے اٹھارہ سال کے درمیان بتائی گئی ہے۔ ڈاکٹر محمد توفیق کے مطابق ہفتہ 9 فروری کو میدیکل بورڈ ایک بار دوبارہ میدیکل رپورٹس کی ایگزامینشن کرے گا جس کے بعد عدالت کو رپورٹ پیش کی جائیگی۔دوسری طرف چارسال تک ملزم شاہ رخ جتوئی لاہور کے ایک نجی ادارے میں زیرتعلیم رہا جس پر تفتیشی ٹیم نے عدالتی احکامات کے ساتھ ایچی سن انتظامیہ سے ریکارڈ طلب کرلیاہے ۔ شاہ رخ جتوئی کے خاندان نے پیدائشی سرٹیفکیٹ فراہم کرنے سے معذرت کرتے ہوئے موقف اپنا یاکہ اُن کا چشم وچراغ گاﺅں میں ہسپتال کی بجائے دائی کے ہاتھو ں پیداہوا ۔

مزید : کراچی