لٹن روڈ کے مکینوں کا پولیس کے خلافعدالت میں احتجاج

لٹن روڈ کے مکینوں کا پولیس کے خلافعدالت میں احتجاج

لاہور (نامہ نگار )لٹن روڈ پولیس کی طرف سے علاقے کے مکینوں کو مبینہ طور پر پریشان کرنے اورایک شہری کے گھر داخل ہو کر توڑ پھوڑ کرنے پر علاقے کے لوگوں نے سیشن کورٹ کے باہر خاموش احتجاج کیا،جبکہ عدالت نے اس سلسلے میں دائردرخواست پر پولیس کو مکینوں کو ہراساں کرنے سے روک دیاایڈیشنل سیشن جج مسعود حسین کی عدالت میں لٹن روڈ کا رہائشی خواجہ منیرحْسین ،ایس ایچ او لٹن روڈ اور اہلکار راشد کے خلاف ہراساں کرنے اور بیٹے کو مختلف کیسوں میں ملوث کرنے کی دھمکیاں دینے پر علاقہ مکینوں کے ہمراہ پیش ہوا،جہاں خواجہ منیر حْسین نے اپنے وکیل محمد ایوب ایڈووکیٹ کی وساطت سے مؤقف اختیار کیا کہ ایس ایچ اور اور اس کا کار خاص ان کو ہراساں کررہا ہے، جو دو روز قبل 18پولیس اہلکاروں کے ہمراہ اس کے گھر داخل ہوا ، توڑ پھوڑ کی اور دھمکی دی کہ اگر سی سی پی او کو درخواست دی تو اس کے بیٹے عنبربٹ کو مختلف کیسوں میں ملوث کردیا جائے گا ،اس کے ڈر سے اس کا بیٹا چھپا ہوا ہے جبکہ علاقے میں کسی بھی راہگیر کو روک کر دھمکیاں بھی دی جاتی ہیں،عدالت کے باہر خواجہ منیر کے ساتھ آنے والے افراد نے ہاتھ اٹھا کر خاموش احتجاج کیا۔عدالت نے وکیل کے دلائل کے بعد لٹن روڈ پولیس سے رپورٹ بھی طلب کرلی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4