پاکستان میں ایٹمی توانائی کے 6یونٹ لگا چکے ،پیداوار 34لاکھ کلو واٹ ہے ،چین

پاکستان میں ایٹمی توانائی کے 6یونٹ لگا چکے ،پیداوار 34لاکھ کلو واٹ ہے ،چین

 بیجنگ( مانیٹرنگ ڈیسک ،اے این این) چین نے کہا ہے کہ وہ پاکستان میں ایٹمی توانائی کے 6یونٹس نصب کرچکا ہے جن کی مجموعی پیداواری صلاحیت3.4 ملین کلو واٹ ہے، پاکستان اور ارجنٹائن کو ایٹمی ٹیکنالوجی کی فراہمی کے بعد دوسرے بہت سے ملکوں کو بھی اس ٹیکنالوجی کی برآمد کے امکانات پر بات چیت کی جارہی ہے۔ جمعہ کو بیجنگ میں چین کے قومی ترقی اور اصلاحاتی کمیشن کے نائب وزیر وانگ ژی اوتاؤ نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ چین پاکستان اور ارجنٹائن کو ایٹمی ٹیکنالوجی کی فراہمی کے بعد اب بہت سے ممالک کے ساتھ ایٹمی توانائی سے متعلق آلات کی برآمد کے حوالے سے ابتدائی بات چیت کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے پاکستان میں مجموعی طورپر3.4 ملین پیداواری صلاحیت کے حامل 6 نیوکلیئر آپریٹنگ یونٹس قائم کیے ہیں۔ رواں ہفتے کے آغاز میں چین نے ارجنٹائن کو ایٹمی ٹیکنالوجی کی برآمد پر دستخط کیے جن میں ایٹمی ری ایکٹر کا ہیوی واٹر ماڈل بھی شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایٹمی ٹیکنالوجی کی برآمد یہ ظاہر کرتی ہے کہ چین ہائی ٹیکنالوجی کے آلات کے بہت سے شعبوں میں تیزی سے ترقی کررہا ہے اور وہ اس حوالے سے سرکردہ ممالک کی صف میں شامل ہوگیا ہے۔ ہیوی واٹر ماڈلز کینیڈین ٹیکنالوجی کی بنیاد پر تیار کیے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چین بیرون ملک ایٹمی منصوبوں کی سکیورٹی کے معاملات کو سنجیدہ لے رہا ہے اور فوکوشیما ایٹمی سانحہ کے بعد اس حوالے سے انتہائی سخت معیار اپنائے گئے ہیں۔

مزید : صفحہ اول