پرائمری ،مڈل امتحانات کو شفاف بنانے کیلئے مانیٹرنگ کمیٹیاں قا ئم

پرائمری ،مڈل امتحانات کو شفاف بنانے کیلئے مانیٹرنگ کمیٹیاں قا ئم

لاہور(ذکاء للہ ملک)محکمہ ایجوکیشن نے پنجاب بھر میں پرائمری اورمڈل کے سالانہ امتحانات کے انعقاد کو شفاف بنانے اور امتحانی مراکز کی مانیٹرنگ کرنے کیلئے کمیٹیاں تشکیل دے دیں۔ پنجاب ایگزمینشن کمیشن کے زیر اہتمام پانچویں اور آٹھویں کلاس کے سالانہ امتحانات رواں ماہ سے شروع ہو رہے ہیں ۔ زرائع کے مطابق گزشتہ روز سیکرٹری سکولز ایجوکیشن کی سربراہی میں ایک اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا جسمیں صوبہ بھر کے ایگزیکٹیو ایجوکیشن آفیسرز اور ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ آفیسر ز کو پیک کے زیر اہتمام ہونے والے پرائمری و مڈل کے سالانہ امتحانات کیلئے ذمہ داریاں سونپی گئی ہیں۔اطلاعات کے مطابق امتحانی سنٹروں میں دفعہ 144نافذ کر جائیگی ۔پہلی بار ایک دن میں ایک امتحان لیا جائے گا تاہم بوٹی اور پیپر لیک کے بچاؤکیلئے ایک امتحانی سنٹر ایک سبجیکٹ کے 6,6مختلف پیپر بھیجیں جائیں گے۔امتحانات کی نگرانی اور انتظامی معاملات کو جانچنے کیلئے ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ آفیسرز اور ایگزیکٹیو ایجوکیشن آفیسرز پر معشتل کمیٹیاں بنائی گئی ہیں جو لحمہ بہ لمحہ کی صورتحال محکمہ ایجوکیشن سکولز کو رپورٹ کرنے کی پابند ہونگی۔ذرائع کے مطابق گزشتہ روز ہونے والے اعلیٰ سطحی اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ امتحانی سنٹروں میں پیپر لیک ہونے کی صورت میں معتلقہ ای ڈی او اور ڈی ایم او کو معطل کر کے اکے خلاف قانونی کاروائی بھی جائے گی۔اجلاس میں پنجاب ایگزیمینشن کمیشن کے افسران سے مشاورت کے بعد پانچویں اور آٹھویں کے سالانہ امتحانات کی ڈیٹ شیٹ کا اعلان بھی کر دیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق پانچویں جماعت کا پہلا امتحان سائنس کا 21فروری،ریاضی کا 23فروری،انگریزی کا 24فروری,،اردو کا 25فروری اور اسلامیات کا 26فروری کو امتحان ہو گا۔اسی طرح آٹھویں کا پہلا سالانہ امتحان 27فروری کو سائنس کے سبجیکٹ کا ہو گا،28فروری کو ریاضی،2مارچ کو انگلش،3مارچ کو اردو اور 4مارچ کو اسلامیات کا امتحان ہوگا۔امتحانی مراکز میں سوالیہ پیپرز کی رسائی کی خفیہ مانیٹرنگ کی جائے گی جبکہ امتحانی سنٹروں کے باہر امن و امان کی صورتحال کو موثر بنانے کیلئے قانون نافذ کرنے والے کی خدمات بھی حاصل کی جائے گی۔سیکرٹری سکولز ایجوکیشن عبدالجبار شاہین نے صوبہ بھر کے ضلعی تعلیمی افسران کو پرائمری اور مڈل کے سالانہ امتحانات میں ڈیوٹیاں سرانجام دیتے ہوئے پنجاب ایگزیمینیشن کمیشن کو امتحانی عملہ تشکیل دینے کے احکامات بھی جاری کر دیے ہیں جبکہ مانیٹرنگ و انسپکشن کے نظام کو مضبوط بنیادوں پر کرنے کی ہدایات بھی جاری کر دی ہیں۔

مزید : صفحہ اول