پیرس حملوں کا مشتبہ ملزم عدالت میں سوالوں کا جواب دینے سے انکاری

پیرس حملوں کا مشتبہ ملزم عدالت میں سوالوں کا جواب دینے سے انکاری

برسلز (این این آئی)فرانس کے دار الحکومت پیرس میں نومبر 2015ء میں دہشت گردی کے حملوں کے واحد زندہ بچ جانے والے مشتبہ ملزم نے برسلز میں ایک عدالت میں اپنے خلاف مقدمے کی سماعت کے دوران میں کسی قسم کے سوالوں کا جواب دینے سے انکار کردیا ۔امریکی ٹی وی کے مطابق صلاح عبدالسلام کے خلاف اس کے آبائی شہر برسلز میں پولیس کے ساتھ مقابلے اور پولیس اہلکاروں کے قتل کی کوشش کے الزام میں مقدمہ چلایا جارہا ہے۔اس نے خودکار ہتھیار سے پولیس اہلکاروں پر فائرنگ کی تھی اور فرار ہوگیا تھا مگر اس کو 18 مارچ 2016ء کو اسی علاقے سے گرفتار کر لیا گیا تھا جہاں وہ اور داعش کے دوسرے جنگجو رہتے رہے تھے۔باریش صلاح عبدالسلام کو پیرس کی جیل سے برسلز منتقل کیا گیا اور عدالت میں سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔اس کو نقاب پوش محافظوں نے اپنے گھیرے میں لے رکھا تھا۔عدالت میں مقدمے کی کارروائی شروع ہونے کے بعد جب حکام نے اس سے پوچھ تاچھ شروع کی تو اس نے سوالوں کا جواب دینے سے انکار کردیا۔

مزید : عالمی منظر