ہیلتھ کمیشن کی کارروای، 11 ہسپتالوں کے 15آپریشن تھیٹر ز میں سرجری معطل

ہیلتھ کمیشن کی کارروای، 11 ہسپتالوں کے 15آپریشن تھیٹر ز میں سرجری معطل

لاہور (جنرل رپورٹر(پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن نے اپنی انسپکشن مہم کے دورا ن 11 ہسپتالوں کے 15 آپریشن تھیٹرزمیں صفائی کے غیر تسلی بخش انتظامات پر ہر قسم کی سرجری کی سہولیات معطل کردیں اور33 ہسپتالوں کو فراہمی صحت کی سہولیات کے کم سے کم معیارات پر عمل درآمد نہ کرنے پر اظہار وجوہ کے نوٹس بھی جاری کر دیے ۔ان میں 7ہسپتال ایسے بھی ہیں جنہیں میڈیکل فضلا ت کوٹھکانے لگانے کے درست انتظامات نہ ہونے پرنوٹس جاری کیے گئے ہیں۔پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کی ٹیموں نے دو روز میں رحیم یار خان ، فیصل آباد، اوکاڑہ ، خانیوال ، گجرات ، گجرانوالہ، ملتان ، بہاولپو ر ،نا رووال ، جہلم،منڈی بہاؤ الدین ، چنیوٹ ، رحیم یارخان ، سرگودھا ،پا کپتن ، سیالکوٹ اور راولپنڈی میں37 سرکاری اور نجی ہسپتالوں کا معائنہ کیا ۔ان میں سے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال عارف والا، کوٹ مومن ، بھاگٹاں والا، ساہیوال (سرگودھا)، کبیروالا اور سرائے عالمگیر کا ایک ایک آپریشن تھیٹر جبکہ بیوال انٹرنیشنل ہسپتال گجر خان،لیٹن رحمت اللہ بینیوولنٹ ٹرسٹ فری آئی ہسپتال سرگودھا،ڈسٹرکٹ ہیڈکواٹر ہسپتال چنیوٹ اور تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال خانپور(رحیم یارخان)کے دودو آپریشن تھیٹرز میں سرجری روک دی گئی ۔ ان ہسپتالوں کوپنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن نے یہ حکم بھی دیا کہ ان تمام تھیٹرزمیں صفائی کے انتظامات معیار کے مطابق یقینی بنائے جائیں اورپنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کو لیبارٹری رپورٹ بھجوائی جائے۔جن سات ہسپتالوں کو میڈیکل فضلا ت کوٹھکانے لگانے کے درست انتظامات نہ ہونے پربھی نوٹس جاری کیے گئے ہیں ان میں بیوال انٹرنیشنل ہسپتال گجر خان،تحصیل ہیڈکواٹر ہسپتال کوٹ مومن،بھاگٹاں والا، ساہیوال (سرگودھا) اور کبیر والا ، نشتر انسٹی ٹیوٹ آف ڈینٹسٹری ملتان اور ملتان انسٹی ٹیوٹ آف کڈنی ڈزیززشامل ہیں۔ یاد رہے کہ جنوری میں پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن نے 232سرکاری اور نجی ہسپتالوں کی انسپیکشنز مکمل کی اور 192آپریشن تھیٹرز میں سرجری معطل کرنے کے علاوہ 199ہسپتالوں کو اظہار وجوہ کے نوٹسز جاری کیے تھے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1