پنجاب اسمبلی،مفادعامہ سے متعلق 3قراردادیں منظور ،دو موخر

پنجاب اسمبلی،مفادعامہ سے متعلق 3قراردادیں منظور ،دو موخر

لاہور ( این این آئی) پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں مفادعامہ سے متعلقہ 3قراردادیں منظور جبکہ دو موخر کر دی گئیں ،صوبائی وزیر برائے مواصلاحات و تعمیرات ملک تنویر اسلم اعوان نے بتایا کہ پنجاب کی سڑکوں کی دیکھ بھال کے لئے 23ارب روپے کے فنڈز مانگے تھے مگر صرف 4ارب دیئے گئے ہیں ، رکن اسمبلی نگہت شیخ نے کہا کہ جب سے محکمہ بہبود آبادی بنا آبادی میں اضافہ ہوا ہے اس محکمے کو بند کر دیا جائے تو آبادی پر کنٹرول کیا جا سکتا ہے ، پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر وسیم اختر نے نکتہ اعتراض پر کہا کہ ابھی تک کسان گنے کی فصل کی وجہ سے ذلیل و خوار ہو رہے اور ان کا گنا 60روپے فی من حکومت کی سرپرستی میں خریداجا رہا ہے جبکہ زیادہ تر ملز مالکان کے خلاف کوئی ایکشن نہیں لیا جارہا ۔ پنجاب اسمبلی کا اجلاس گزشتہ روز بھی اپنے مقررہ وقت کی بجائے ایک گھنٹہ 40 منٹ کی تاخیر سے اسپیکر رانا محمد اقبال خاں کی صدارت میں شروع ہوا ۔ اجلاس میں محکمہ تعمیرات ،مواصلات اور بہبود آبادی کے متعلقہ محکموں کے بارے میں سوالوں کے جوابات متعلقہ وزراء نے دیئے۔ پرائیویٹ ممبر ڈے کے موقع پرایوان میں مفاد عامہ سے متعلقہ 5 قراردادیں ایوان میں پیش کی گئیں جن میں پہلی قرارداد نبیلہ حاکم علی کی تھی ۔یہ قرارداد اسپیکر نے غیر ضروری سمجھتے ہوئے موخر کر دی ،دوسری قرارداد رکن اسمبلی احمد خان کی تھی جس میں کہا گیا کہ یہ ایوان وفاقی حکومت سے سفارش کرتا ہے کہ ٹولہ بانگی خیل اور اس سے ملحقہ علاقوں کو بجلی مہیا کرنے کے اقدامات کئے جائیں۔ یہ قرارداد محرک کی عدم موجودگی کی وجہ سے موخر کردی گئی۔ تیسری قرارداد رکن اسمبلی سبطین خان کی تھی جس میں کہا گیا کہ اس ایوان کی رائے ہے کہ شادی کی تقریبات کے موقع پر آتشبازی اور ہوائی فائرنگ کرنے والوں کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جائے۔ یہ قرارداد متفقہ طور پر منظور کر لی گئی ۔چوتھی قراردادڈاکٹر وسیم اختر کی تھی جس میں کہا گیا کہ اس ایوان کی رائے ہے کہ سپیڈو بس سروس میں بزرگ اور معذور افراد کو مفت سفر کی سہولت فراہم کی جائے ،یہ قرارداد بھی متفقہ طور پر منظور کر لی گئی۔پانچویں قرارداد رکن اسمبلی حنا پرویز بٹ کی تھی جس کہا گیا کہ اس ایوان کی رائے ہے کہ موسمی انفلوئنزہ کے جان لیواء اور مہلک وائرس کے بارے میں صوبہ بھر میں آگاہی مہم چلائی جائے۔اس قرار داد کو کثرت رائے سے منظور کر لیا گیا۔ ایجنڈا مکمل ہونے پر اسپیکر نے اجلاس آج ( بدھ ) صبح10بجے تک کیلئے ملتوی کردیا۔

پنجاب اسمبلی

مزید : صفحہ آخر