لیبارٹری ٹیسٹ ، چارجز ، ہیلتھ کیئر کمیشن کو رپورٹ جمع کرنے کے احکامات

لیبارٹری ٹیسٹ ، چارجز ، ہیلتھ کیئر کمیشن کو رپورٹ جمع کرنے کے احکامات

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس اکرام اللہ اور جسٹس محمدغضنفرپرمشتمل دورکنی بنچ نے صوبے میں قائم میڈیکل لیبارٹریوں اوراس کے ٹیسٹوں کے چارجز سے متعلق مکمل سروے کرکے ہیلتھ کیئرکمیشن کو پندرہ یوم کے اندر رپورٹ جمع کرنے کے احکامات جاری کردئیے ہیں فاضل بنچ نے سیف محب اللہ کاکاخیل ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائررٹ کی سماعت کی اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ اس وقت صوبے میں ہزاروں کی تعداد میں نجی میڈیکل لیبارٹریا ں قائم ہیں جو کہ من پسنداضافی ریٹ وصول کررہے ہیں حالانکہ ان لیبارٹریوں کو کنٹرول کرنے کے لئے ہیلتھ کئیرکمیشن قائم ہے لہذاانہیں اس حوالے سے ان لیبارٹریوں کو ریگولیٹ کرنے کی ہدایات جاری کی جائیں اس دوران ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل نے عدالت کو بتایاکہ ہیلتھ کیئرکمیشن لیبارٹریوں اورہسپتالوں کو ریگولیٹ کرنے کے لئے بنایاگیاہے جو اس حوالے سے ڈیٹااکٹھاکررہا ہے اوراس مقصد کے لئے چیف ایگزیکٹوہیلتھ کیئرکمیشن نے ایک ٹاسک فورس بھی بنائی ہے چونکہ ا ن لیبارٹریوں کی تعداد ہزاروں میں ہے لہذااس میں کچھ وقت لگے گاجس پرعدالت نے اسے ہدایت کی کہ پندرہ یوم کے اندر ان لیبارٹریوں سے متعلق ڈیٹااورنرخوں کے تعین سے متعلق رپورٹ عدالت میں پیش کی جائے بعدازاں فاضل بنچ نے سماعت اگلی پیشی تک ملتوی کردی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر