پولیو کا خاتمہ ہمارے لئے بہت بڑا چیلنج ہے ،سعید احمد منہاس

پولیو کا خاتمہ ہمارے لئے بہت بڑا چیلنج ہے ،سعید احمد منہاس

ہنگو (بیورورپورٹ)پولیو کا خاتمہ ہمارے لئے ایک بڑا چیلنج ہے۔ملک کے چپے چپے کے ہر بچے کو پولیوقطرے پلائے جائیں گے۔2017میں پولیو کیسز میں توقعات سے زیادہ کمی واقع ہوئی ۔پورے ملک بالخصوص خیبر پختونخواہ اور فاٹا میں پولیو وائرس کے خاتمہ کے لئے سخت ترین انتظامات کئے گئے ہیں۔ ضلع ہنگو میں پولیو عملہ کی مانیٹرنگ اور پولیو سے متعلق دیگر معاملات کے لئے ڈی سی آفس میں کنٹرول روم کا قیام بھی عمل میں لایا گیا ہے۔ این آئی ایچ پولیو ٹسٹنگ لیبارٹری سے رزلٹ آنے تک پولیووائرس کی تصدیق نہیں کی جا سکتی۔پولیو مہم میں فاٹا متاثرین بالخصوص افغان مہاجرین پر خصوصی توجہ دی جا رہی ہیں۔ میڈیا اور عوام کے تعاون سے عنقریب پورے ملک سے پولیووائرس کا مکمل خاتمہ یقینی بنا ئیں گے۔ ان خیالات کا اظہارملک بھر کے لئے پولیو میڈیا سپیشلسٹ سعید احمد منہاس ، اعجاز الرحمان اور شاداب نے ڈسٹرکٹ پولیو کنٹرول روم میں مقامی صحافیوں کو پولیو کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے کیا۔ انہوں نے سنئیر صحافیوں کو بتایا کہ سال 2014میں پاکستان میں پولیووائر س کے 306کیسز تھے جبکہ گزشتہ سال وفاقی اور صوبائی حکومتوں بالخصوص میڈیا کی کوششوں سے پولیو وائرس میں انتہائی کمی واقع ہوئی اور 2017میں پورے ملک میں صرف 8کیسز سامنے آئے ہیں جس کی اصل وجہ والدین اوروہ سرپرست ہے جنہوں نے پولیو قطرے سے انکار کرنے یا پولیو عملہ کو دھوکہ دیکر بچوں کوقطرے نہ پلاکر اپنے ہی بچوں کوایک صحت مند مستقبل سے محروم رکھا گیا۔انہوں نے کہا کہ پولیووائر س کی نشاندہی کے بعد متاثرہ بچے کی پخانے کی نمونے ٹسٹ کے لئے اسلام آباد این آئی ایچ پولیو ٹسٹنگ لیبارٹری ارسال کئے جاتے ہیں جہاں سے رزلٹ آنے تک پولیو وائرس کی تشخیص کا اندازہ نہیں لگایا جا سکتا۔ میڈیا سپیشلسٹ سعید منہاس و دیگر نے کہا کہ میڈیا معاشرے کی آنکھ اور کان ہوتے ہیں جبکہ ملک سے پولیو وائر کے مکمل خاتمے میں سب سے اہم کردار میڈیا کا ہے۔انہوں نے کہا کہ پولیو وائرس سے چھٹکارہ حاصل کرنے اورمقررہ حدف پورا کرنے کے لئے ہنگو میں کنٹرول روم بھی قائم کیا گیا ہے جو کہ پولیو عملہ کی مانیٹرنگ سمیت پولیو سے متعلق تمام تر معاملات پر نظر رکھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ والدین بچوں کو معذوری سے بچانے اور ایک صحت مند معاشرے کی تشکیل نو میں اپنا کردار ادا کرتے ہوئے اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے پلائیں اور پولیو مہم میں عملہ کے ساتھ مکمل تعاون کریں۔ انہوں نے کہا کہ پچوں کو پولیو کے قطرے نہ پلانے سے اپنے ہی بچوں سے صحت مند اور روشن مسنقبل چیننے کے مترادف ہے۔میڈیا عوام میں شعور اجاجگر کرنے کے لئے ماضی کی طرح آئیندہ بھی مثبت کردار ادا کرتے ہوئے محکمہ صحت اور پولیو عملہ کے ساتھ تعاون کریں ۔انہوں نے کہا مزید کہا کہ و ہ وقت دور نہیں جب پاکستان بھر سے پولیو وائر س کا ہمیشہ ہمیشہ کے لئے مکمل خاتمہ ہوگا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر