شہریوں کو حبس بیجا میں رکھنے سے متعلق درخواست کی سماعت

شہریوں کو حبس بیجا میں رکھنے سے متعلق درخواست کی سماعت

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائی کورٹ میں شہریوں کوغیرقانونی حبس بیجا میں رکھنے اور جھوٹا مقدمے درج کرنے سے متعلق درخواست کی سماعت ،عدالت نے ملزم کیخلاف اے ٹی سی کا فیصلہ آنے تک مزید سماعت19 فروری تک ملتوی کردی ۔منگل کو سندھ ہائی کورٹ کے جسٹس نعمت اللہ پھلپوٹو پرمشتمل دو رکنی بینچ کی عدالت میں شہریوں کوغیرقانونی حبس بیجا میں رکھنے او جھوٹا مقدمے درج کرنے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ عدالت میں ملزمان کی جانب سے وکیل صفائی کا کہنا تھا کہ سی ٹی ڈی حکام نے خان زادہ، سید وقاص حسین اور عزیز گل کو غیر قانونی حراست میں لیا ۔سیشن عدالت کی ہدایت پرجوڈیشنل مجسٹریٹ نے چھاپہ مار کر شہریوں کو بازیاب کرایا تھا۔ شہریوں کو رہا کرنے کے بجائے سی ٹی ڈی نے دہشت گردی کا مقدمہ درج کردیا گیا۔عدالت کے علم میں حقیقت لائے بغیر شہریوں کا ریمانڈ بھی لے لیا گیا۔ آئی جی سندھ بتائیں کہ سی ٹی ڈی افسران واہلکاروں کیخلاف کیا کارروائی کی ۔کیا افسران کیخلاف مقدمہ درج کیا گیا۔ عدالت نے آئی جی سندھ سے جواب طلب کیاتھا جبکہ عدالت میں وکیل صفائی کا کہناتھا کہ عدالت سے استدعا ہے کہ اے ٹی سی کا فیصلہ آنے کے بعد اگلی سماعت مقرر کی جائے ۔عدالت نے وکیل صفائی کا موقف سنتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 19 فروری تک ملتوئی کردی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر