اسما قتل کیس، گرفتارملزمان بچی کے رشتہ دار ہیں: جے آئی ٹی

اسما قتل کیس، گرفتارملزمان بچی کے رشتہ دار ہیں: جے آئی ٹی
اسما قتل کیس، گرفتارملزمان بچی کے رشتہ دار ہیں: جے آئی ٹی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

مردان (ڈیلی پاکستان آن لائن) ننھی اسما کی فرانزک رپورٹ آنے کے بعد 2 ملزمان کو حراست میں لیا گیا ہے ، ملزمان کے بارے میں انکشاف ہوا ہے کہ وہ معصوم بچی کے قریبی رشتہ دار ہیں اور گھر کے سامنے ہی رہتے تھے۔

اسما قتل کیس میں مردان سے لیے جانے والے 145 سیمپلز میں سے ایک شخص کا ڈی این اے میچ کر گیا تاہم ملزم کا نام ابھی ظاہر نہیں کیا گیا۔ پنجاب حکومت سے فرانزک رپورٹ ملنے کے فوراً بعد خیبر پختونخوا پولیس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے کیس میں ملوث 2 مبینہ ملزمان کو گرفتار کر لیا ۔حراست میں لئے گئے ملزمان بچی کے رشتہ دار ہیں اور ان کی عمریں 30 سال سے کم ہیں۔

اسما کیس کی تفتیش کرنے والی جے آئی ٹی کے رکن فلک نیاز نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گرفتار افراد اسما کے قریبی رشتہ دار اور عام مزدور ہیں ۔ دونوں ملزمان اسما کے گھر کے سامنے رہتے تھے۔ فلک نیاز کے مطابق، پولیس نے ابھی تک 300 مشتبہ افراد سے تفتیش کی ہے۔

واضح رہے کہ مردان کے نواحی علاقے گوجر گڑھی سے چار سالہ بچی اسما گھر کے سامنے کھیلتے ہوئے لاپتہ ہوگئی تھی تاہم بعد میں اس کی لاش گھر کے قریب واقع گنے کے کھیت سے ملی تھی۔ 4 سالہ بچی کو زیادتی کے بعد گلا دبا کر قتل کیا گیا تھا۔

مزید : قومی /جرم و انصاف /علاقائی /خیبرپختون خواہ /مردان