عامر لیاقت پر پابندی کے خلاف کیس کی سماعت، اینکر پرسن کے بار بار بولنے کی کوشش پر چیف جسٹس برہم

عامر لیاقت پر پابندی کے خلاف کیس کی سماعت، اینکر پرسن کے بار بار بولنے کی ...
عامر لیاقت پر پابندی کے خلاف کیس کی سماعت، اینکر پرسن کے بار بار بولنے کی کوشش پر چیف جسٹس برہم

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے عامر لیاقت حسین پر عائد پابندی ختم کردی ہے، کیس کی سماعت کے دوران اینکر پرسن بار بار اٹھ کر بولنے کی کوشش کرتے رہے جس پر عدالت نے سخت برہمی کا اظہار کیا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیل کی سماعت کے دوران ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے بولنے کی کوشش کی تو چیف جسٹس نے کہا کہ وکیل موجود ہے تو عامر لیاقت کو بات کرنے کی ضرورت نہیں، یہ عدالت ہے ان کا ٹی وی پروگرام نہیں ہے۔ عامر لیاقت عدالت میں بار بار کھڑے ہو کر بولنے کی کوشش کرتے رہے تو چیف جسٹس نے برہمی کا اظہار کیا اور کہا لگتا ہے عامر لیاقت نے عدالت میں نہ بیٹھنے کی قسم اٹھائی ہے۔

متعلقہ خبر:عامر لیاقت حسین کے ٹی وی پر آنے پر عائد پابندی ختم

چیف جسٹس نے عامر لیاقت کے وکیل ڈاکٹر بابر اعوان کو مخاطب کرکے کہاکہ ساتھ بیٹھے جج عمر عطا بندیال صاحب نے عامر لیاقت کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کر دینا ہے، معزز جج صاحب کو ان کا کنڈکٹ پسند نہیں آیا۔ چیف جسٹس کے ان ریمارکس پر وکیل بابر اعوان نے کہا کہ میں عدالت سے معذرت خواہ ہوں ۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے ٹی وی پر آنے پر عائد پابندی ختم کرتے ہوئے اسلام آباد ہائیکورٹ کا فیصلہ ختم کردیا ہے۔ دورانِ سماعت چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ ہائیکورٹ کے پاس سو موٹو لینے کا اختیار نہیں ہے۔

مزید : قومی /تفریح /علاقائی /اسلام آباد

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...