سپریم کورٹ کی عمارت شاہراہ دستور پرقائم عمارتوں سے اونچی ہے: چیف جسٹس

سپریم کورٹ کی عمارت شاہراہ دستور پرقائم عمارتوں سے اونچی ہے: چیف جسٹس
سپریم کورٹ کی عمارت شاہراہ دستور پرقائم عمارتوں سے اونچی ہے: چیف جسٹس

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کی عمارت شاہراہ دستور پر قائم عمارتوں سے اونچی بنائی گئی ہے۔

آرٹیکل 62 ون ایف میں نا اہلی کی مدت کے حوالے سے درخواستوں کی سماعت میں لطیف کھوسہ کے دلائل کے دوران چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس میں کہا ہم نے لوگوں پر عدلیہ کے وقار کو بحال کرنا ہے کون صحیح ہے اور کون غلط ہے اس کا فیصلہ لوگوں نے کرناہے، ایک کرتے پر حضرت عمرؓپر سوال اٹھ گیا لیکن انہوں نے کرتے کے سوال پر مزید استفسار نہیں کیا۔

ججز کو کوئی باہر نہیں نکال سکتا ،چیف جسٹس، جوہورہاہے سب اللہ کی نشانی ہے : جسٹس عمر عطا بندیال

انہوں نے مزید کہا کہ اگر سربراہ ایماندار نہ ہو تو پورے ادارے پراثرپڑتا ہے، سپریم کورٹ کی عمارت شاہراہ دستور پرقائم سب عمارتوں سے اونچی ہے، سپریم کورٹ کی عمارت کیوں اونچی ہے یہ نہیں بتاو¿ں گا۔ چیف جسٹس نے کہا بے انصافی سے معاشرہ قائم نہیں رہ سکتا ہماری ذمہ داری انصاف کرنا ہے جس سے معاشرہ قائم رہتاہے۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد /اہم خبریں