”نقیب اللہ کے ساتھ مارے گائے اسحاق نامی شخص کو پنجاب پولیس نے گرفتار کیا لیکن یہ سندھ پولیس کے ہاتھوں مارا گیا “ یہ سب کیسے ہوا ؟حامد میرنے ایسا انکشاف کر دیا کہ سن کر آپ کے ہوش اڑ جائیں گے

”نقیب اللہ کے ساتھ مارے گائے اسحاق نامی شخص کو پنجاب پولیس نے گرفتار کیا ...
”نقیب اللہ کے ساتھ مارے گائے اسحاق نامی شخص کو پنجاب پولیس نے گرفتار کیا لیکن یہ سندھ پولیس کے ہاتھوں مارا گیا “ یہ سب کیسے ہوا ؟حامد میرنے ایسا انکشاف کر دیا کہ سن کر آپ کے ہوش اڑ جائیں گے

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن )سینئر صحافی حامد میر نے کہاہے کہ آج کل میڈیا میں نقیب اللہ محسود کے قتل کے بارے میں بہت بات ہو رہی ہے اور ان کے ساتھ تین اور افراد کو بھی قتل کیا گیا جس میں ایک اسحاق نامی شخص بھی تھا اور اس کا تعلق پنجاب کے علاقے اوچ شریف سے تھا ،اسے پنجاب پولیس نے گرفتار کیا اور پتہ نہیں کیسے سندھ پولیس کے حوالے کیا اور وہ کراچی میں مارا گیا ۔

تفصیلات کے حامد میر کا کہناتھا کہ کراچی میں جس اسحاق نامی شخص کو پولیس مقابلے میں قتل کیا گیا اس کا بھائی اسلام آباد میں جاری احتجاجی مظاہرے میں موجود ہے ۔حامد میری نے اسحاق کے بھائی کا ویڈیو کلپ چلا کر اس کا بیانیہ بھی عوام کے سامنے رکھا ۔اسحاق کے بھائی یوسف کا کہناتھا کہ راﺅ انوار نے نقیب اللہ کے ساتھ میرے بھائی کو بھی جعلی مقابلے میں شہید کیا ،میرے بھائی کو 11 نومبر 2016 کو ہمارے گاﺅں سے ہی پنجاب پولیس نے اٹھایا ۔یوسف کا کہناتھا کہ میرا بھائی نے گاﺅں میں مدرسہ بنا رکھا تھا جہاں وہ بچوں کو پڑھانے میں مصروف تھا کہ دن کے وقت دو پولیس کی گاڑیاں آئیں اور وہ سیدھی مدرسے کے اندر چلی گئیں جس کے بعد اسے اٹھا کر گاڑی میں ڈالا اور لے گئے ۔اس کا کہنا تھا کہ میرا بھائی بے قصور تھا ہم چیف جسٹس اور آرمی چیف سے انصاف کیلئے اپیل کرتے ہیں ۔

ویڈیو دیکھٰیں:

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی