’شادی شدہ لوگ بے وفائی سب سے زیادہ اس وجہ سے کرتے ہیں کہ۔۔۔‘ تازہ تحقیق میں ماہرین نے ایسی وجہ بے نقاب کردی جو کسی نے اب تک سوچی بھی نہ تھی

’شادی شدہ لوگ بے وفائی سب سے زیادہ اس وجہ سے کرتے ہیں کہ۔۔۔‘ تازہ تحقیق میں ...
’شادی شدہ لوگ بے وفائی سب سے زیادہ اس وجہ سے کرتے ہیں کہ۔۔۔‘ تازہ تحقیق میں ماہرین نے ایسی وجہ بے نقاب کردی جو کسی نے اب تک سوچی بھی نہ تھی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

برمنگھم(نیوز ڈیسک)کوئی بھی یہ جاننا نہیں چاہے گا کہ وہ جس سے محبت کرتا ہے اس کے دل میں کسی اور کے لیے جگہ ہو،لیکن تلخ حقیقت یہ ہے کہ بہت سے لوگ شریک حیات کے ساتھ بے وفائی کرتے ہیں۔ایک اندازے کے مطابق مردوں میں سے تقریباً 45 فیصداور خواتین میں سے تقریباً 21 فیصد بے وفائی کا ارتکاب کرتے ہیں۔ویب سائٹ ایشلی میڈیسن کی جانب سے اس موضوع پر ایک تحقیق کی گئی ہے کہ آخر لوگ کیوں بے وفائی کرتے ہیں، اور پتہ چلا ہے کہ جسمانی بھوک اور ہلکی پھلکی دل لگی کا شوق بے وفائی کی دو بنیادی ترین وجوہات ہیں۔

تقریبا 2000 افراد سے کی گئی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اکثر لوگ محض کچھ وقت کی دل دلگی کی کوشش کرتے ہیں لیکن یہ معاملہ بڑھ جاتا ہے اوربالاآخروہ اپنے شریک حیات سے بے وفائی کر بیٹھتے ہیں۔اس تحقیق کے دوران تقریباً 54 فیصد لوگوں نے بتایاکہ وہ اپنے شریک حیات کو دھوکا نہیں دینا چاہتے تھے بلکہ تفریح طبع کے لئے کچھ فلرٹ کرنا چاہ رہے تھے مگر رفتہ رفتہ بات آگے بڑھتی چلی گئی اور پھر یہ معاملہ ان کے ہاتھ سے نکل گیا۔

تحقیق کے شرکاءمیں سے 61 فیصد نے بتایا کہ فلرٹ کی جانب انہیں جسمانی خواہش نے مائل کیا۔ ان میں سے اکثر نے کسی خوبصورت چہرے یا ہینڈسم جسم کو دیکھ کو ہلکے پھلکے فلرٹ کا آغاز کیا جو بعد میں ناجائز تعلق کی صورت اختیار کر گیا۔ان میں سے 71 فیصد کا یہ بھی کہنا تھا کہ شروع میں انھیں اپنے ناجائز مراسم پر پشیمانی محسوس ہوتی تھی لیکن پھر وہ اس کے عادی ہو گئے اور بغیر کسی پر یشانی وپشیمانی کے اپنے شریک حیات کو دھوکا دینے لگے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس