سابق وزیر اعظم اور ان کی بیٹی کی مبینہ عدلیہ مخالف تقاریر کے خلاف درخواست پر نوٹس جاری

سابق وزیر اعظم اور ان کی بیٹی کی مبینہ عدلیہ مخالف تقاریر کے خلاف درخواست پر ...
سابق وزیر اعظم اور ان کی بیٹی کی مبینہ عدلیہ مخالف تقاریر کے خلاف درخواست پر نوٹس جاری

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائیکورٹ نے سابق وزیر اعظم میاں محمدنواز شریف اور ان کی بیٹی مریم نواز کی مبینہ عدلیہ مخالف تقاریر کے خلاف دائرایک درخواست پر نوٹس جاری کر دیئے ہیں ۔

جسٹس شاہد کریم نے مقامی خاتون شہری آمنہ ملک کی درخواست پر سماعت کی جس میں سابق وزیر اعظم اور ان کی بیٹی کی پشاور اور آزاد کشمیر میں عدلیہ مخالف تقاریر کی نشاندہی کی گئی ہے، درخواست میں وفاقی حکومت اور پیمرا کو بھی فریق بنایا گیا ہے، درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف اور ان کی بیٹی مسلسل اعلی عدلیہ پر تنقید کر رہے ہیں، درخواست میں نشاندہی کی گئی کہ پہلے کے پی کے اور پھر آزاد کشمیر میں جلسوں میں اعلیٰ عدلیہ کی توہین کی جو توہین عدالت کے قانون کے تحت جرم ہے،درخواست میں نشاندہی کی گئی ہے کہ نواز شریف اور ان کی بیٹی مریم نواز بھی پہلے بھی عدلیہ مخالف تقاریر کر چکے ہیں اور پاناما کیس کے فیصلے کے بعد سپریم کورٹ کے فل بنچ کو مسلسل تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، درخواست میں نشاندہی کی گئی کہ پیمرا عدلیہ کے خلاف بیانات کو نشر کرنے سے روکنے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے، درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ اعلیٰ عدلیہ کے خلاف تقاریر پر میاں محمدنواز شریف،مریم نواز کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے ،درخواست گزار نے یہ استدعا بھی کی کہ توہین آمیز تقاریر کی نشریات نہ روکنے پر پیمرا کے خلاف کارروائی کی جائے، درخواست پر آئندہ سماعت 14 فروری کو ہو گی۔

لائیو ٹی وی دیکھنے کے لئے اس لنک پر کلک کریں

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...