سربراہ پی آئی اے کی تعیناتی غیر قانونی، برطرف کیا جائے، آڈیٹر جنرل

سربراہ پی آئی اے کی تعیناتی غیر قانونی، برطرف کیا جائے، آڈیٹر جنرل

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)آڈیٹر جنرل آف پاکستان نے ائیر مارشل ارشد ملک کی پاکستان ائیرلائنز (پی آئی اے) میں چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) کے عہدے پر تعیناتی کو خلاف قانون قرار دے کرفوری برطرفی کی سفارش کردی۔آڈیٹرجنرل نے ائیر مارشل ارشد ملک کو پی آئی اے سے ملنے والے ماہانہ لاکھوں روپے بھی واپس لینے کی سفارش کی ہے۔آڈیٹر جنرل پاکستان کی رپورٹ میں ائیر مارشل ارشد ملک کی سی ای او کے عہدے پر تقرری کو بدنیتی، ذاتی پسند اور غیرقانونی قرار دیا گیا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ائیر مارشل ارشد ملک کی پی آئی اے میں تقرری کیلئے سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) اور فورسز کے ڈیپوٹیشن قوانین کو ملی بھگت اور غیر شفاف طریقے سے استعمال کیا گیا۔رپورٹ میں سفارش کی گئی کہ ارشد ملک کی خلاف ضابطہ تقرری کی تحقیقات کسی آزاد ادارے سے کرائی جائے۔رپورٹ میں نشاندہی کی گئی کہ اگر قواعد و ضوابط کے مطابق ائیر مارشل ارشد ملک انٹرویو بورڈ میں پیش ہوتے تو انہیں پاک فضائیہ سے مستعفی ہونا پڑتا۔
آڈیٹر جنرل

مزید :

صفحہ اول -