منشیات کے نئے قانون کے مقدمات سماعت کیلئے ایڈیشنل سیشن جج کو اختیارات تفویض

منشیات کے نئے قانون کے مقدمات سماعت کیلئے ایڈیشنل سیشن جج کو اختیارات تفویض

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

  
پشاور(نیوزرپورٹر)خیبرپختونخواحکومت نے انسدادمنشیات خیبرپختونخوا کے نئے قانون کے تحت درج مقدمات کی سماعت کے لئے صوبہ بھرکے اضلاع میں تعینات ایڈیشنل سیشن ججوں کوخصوصی اختیارات تفویض کردئیے ہیں جس کے بعداس قانون کے تحت درج مقدمات میں نامزدملزم خصوصی عدالتوں میں درخواست ضمانت دائرکرسکتے ہیں جبکہ یہی عدالتیں ان مقدمات کی سماعت بھی کریں گی واضح رہے کہ انسدادمنشیات ایکٹ2019ء کے تحت درج ہونے والے مقدمات کی سماعت کااختیارخصوصی عدالتوں کوحاصل ہے تاہم صوبائی حکومت نے ایکٹ کے نفاذ کے بعدخصوصی عدالتوں کو اختیارات تفویض نہیں کئے تھے اورسیشن کورٹ کی عدالتیں ان مقدمات کی سماعت کااختیارنہ رکھتی تھیں جس پرنئے دفعات کے تحت درج مقدمات میں نامزدملزم درخواست ضمانت دائرکرنے کے حق سے محروم ہوگئے تھے اوران ملزموں کو ضمانت کے لئے بہ امرمجبوری پشاورہائی کورٹ سے رجوع کرناپڑرہاتھا جس کے خلاف خیبرپختونخوابارکونسل کی کال پروکلاء نے پشاورہائی کورٹ اورماتحت عدالتوں کا8جنوری سے غیرمعینہ مدت کے لئے عدالتی بائیکاٹ کااعلان بھی کیااوروکلاء نے احتجاج بھی کیاخیبرپختونخواحکومت نے گذشتہ روز ایک اعلامیہ کے ذریعے انسدادمنشیات ایکٹ2019ء کے تحت صوبہ بھرکے مختلف اضلاع میں تعینات ایڈیشنل سیشن ججوں کو خصوصی اختیارات تفویض کردئیے ہیں اوراس کی روشنی میں اس قانون کے تحت درج مقدمات میں نامزدملزم اب ضمانت کے لئے ان عدالتوں سے رجوع کرسکتے ہیں۔