(ن)لیگ ختم ہو چکی،کسی کو مایوسی دیکھنی ہو تو فضل الرحمٰن کی تصویر دیکھ لے:فواد چوہدری

(ن)لیگ ختم ہو چکی،کسی کو مایوسی دیکھنی ہو تو فضل الرحمٰن کی تصویر دیکھ ...

  

 لاہور(این این آئی) وفاقی وزیر سائنس وٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ لوگ اپنے بچوں کو زرداری یا نوازشریف نہیں بلکہ عمران خان بنانا چاہیں گے، کسی کو مایوسی دیکھنی ہے تو وہ مولانا فضل الرحمان کی تصویر دیکھ لے،مریم نواز اور بلاول بھٹو کی آنکھوں سے بھی مایوسی جھلک رہی ہے، پی ڈی ایم کو سمجھ نہیں آرہی کہ انہیں کرنا کیاہے، پی ڈی ایم حکومت کو بلیک میل کرنے کی کوشش نہ کرے، حکومت کو آپ دیوار سے نہ لگائیں وہ آپ کو نہیں لگائے گی، مریم نواز کا اپنی پارٹی میں اتنا بڑا قد نہیں، استعفے ایوان میں پہنچنے پرلیگی ارکان اسپیکر کے پاؤں میں بیٹھ گئے،اپوزیشن سے رابطے تو رہتے ہیں،رابطے کرنے والے پتہ نہیں مریم کو بتاتے بھی ہیں یا نہیں،لندن کی عدالت اب ڈیلی میل کیس کو آگے بڑھائے گی،ابھی عدالت نے کوئی فیصلہ نہیں دیا۔اداکارشان سے ان کی والدہ کے انتقال پر اظہار تعزیت کے بعدمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ جن کی وجہ سے آج پاکستان کو یہ دن دیکھنا پڑرہاہے وہ ہمیں آج مشورے دے رہے ہیں، پی ڈی ایم کے پاس کوئی منصوبہ نہیں، مریم نواز اور بلاول بھٹو بتائیں وہ ایسا کیا کریں گے جو پچھلے تیس سال میں نہیں کرسکے، ان کی کوشش ہے عدالتوں سے انہیں ریلیف مل جائے۔ وفاق نے 16سو ارب روپے کراچی کے لئے دیا لیکن پتہ نہیں وہ پیسہ کہاں لگایا گیا۔ آصف زرداری نے پارٹی کا بیڑہ غرق کردیا ہے، وہ کام ضیا ء الحق نہ کرپائے جو پارٹی کے ساتھ زرداری نے کیا۔ مسلم لیگ (ن)بھی ختم ہو گئی ہے، مشورہ ہے کہ سب مل کر مولانا فضل الرحمان کی قیادت میں ایک پارٹی بنا لیں،گھوڑا بھی حاضر ہے اور میدان بھی حاضر ہے،مولانا آئیں اور انتخابات میں حصہ لیں۔ انہوں نے کہا کہ دھرنے کے لئے چھوٹا سا ٹینٹ تو ہم ہی لگوا دیں گے۔ جن لوگوں کی وجہ سے مہنگائی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے وہ ہمیں بتا رہے ہیں،پارلیمنٹ کی تحقیر کرنے کے بعد اسی اسمبلی سے یہ سینیٹ کے ووٹ کی بھیک مانگ رہے ہیں،حکومت اپوزیشن کو دیوار سے نہیں لگانا چاہتی ہے۔مریم بی بی کی بات تو کوئی پارٹی میں بھی سنجیدگی سے نہیں لیتا،پی ڈی ایم مولانا کے مدرسے کے بچوں کے ذریعے احتجاج کرنا چاہتی ہے،پی ڈی ایم فرقہ واریت پر مبنی جماعتوں کو ساتھ ملانا چاہتی ہے۔انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم والوں کو عدالتوں سے این آر او مل نہیں پا رہا۔باہر سے پیسے لے آئیں اور جیلوں سے باہر آجائیں۔500ارب روپے کی ریکوری تو ہوگئی ہے اوربیرون ممالک گیا ہوا پیسہ وہاں کے لوگ استعمال میں لاتے ہیں اس لیے وہ ممالک ان کے دفاع کے لیے آجاتے ہیں۔ پوری کوشش کر رہے ہیں وہ پیسہ باہر سے لایا جائے۔

 فواد چوہدری 

مزید :

صفحہ آخر -