گرینڈ ہیلتھ الائنس کی ایم ٹی آئی ایکٹ کیخلاف احتجاجی ریلی،ملازمین کی بھرپور شرکت

گرینڈ ہیلتھ الائنس کی ایم ٹی آئی ایکٹ کیخلاف احتجاجی ریلی،ملازمین کی بھرپور ...

  

 لاہور (جنرل رپورٹر)  گرینڈ ہیلتھ الائنس پاکستان کے زیر اہتمام گزشتہ روز ایم ٹی آئی ایکٹ کے خلاف ریلی نکالی گئی جس میں پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے اہم رہنماؤں نے بھی شرکت کی۔ریلی کی قیادت الائنس کے صدر ڈاکٹر حامد مختار بٹ نے کی جبکہ دیگر رہنماء نصرت شیخ،یوسف علی ظفر،یوسف بلا نے سروسز ہسپتال سے شروع ہونے والی ریلی کے شرکاء کا لہو گرمایا اور میو ہسپتال میں جا کر اختتام پذیر ہوئی۔ بعد زاں میو ہسپتال میں پڑاؤ کے بعد ایک بڑا جلسہ منعقد ہوا جس ے مرکزی قیادت نے خطاب کیا اس موقع پر اپنے خطاب میں جنرل سیکرٹری ڈاکٹر ملک شاہد شوکت و دیگر رہنماؤں جنرل سیکریٹری پی ایم اے پنجاب ڈاکٹر رانا سہیل، ڈاکٹر اظہار احمد چوہدری، پروفیسر ڈاکٹر تنویر انور، پروفیسر خالد محمود خان، ڈاکٹر ارم شہزادی، ڈاکٹر واجد علی، ڈاکٹر بشریٰ حق،ڈاکٹر احمد نعیم،پروفیسر ڈاکٹر ثاقب سہیل،، ڈاکٹر ریاض ذوالقرنین اسلم، ڈاکٹر طلحہ شیروانی، ڈاکٹر سلمان کاظمی  شامل تھے نے کہا کہ ایم ٹی آئی ایکٹ ایک کالا قانون ہے اور پی ایم اے اس کو مسترد کر چکی ہے۔ اس ضمن میں ہر اْس تنظیم کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا جائے گا جو اس کالے قانون کے خلاف احتجاج کرے گی۔ پی ایم اے سمجھتی ہے کہ یہ قانون سازی سرکاری اداروں کی پرائیوٹائزیشن ہے اور غریبوں سے مفت علاج چھیننے کی گھناؤنی سازش ہے۔ پی ایم اے اس بات کا اعادہ کرتی ہے کہ اگر ڈاکٹروں کے سول سرونٹ اسٹیٹس سے کھلواڑ کیا گیا تو پی ایم اے ہر سطح پر احتجاج کرے گی۔گرینڈ ہیلتھ الائنس کے صدر ڈاکٹر حامد مختار بٹ و دیگر رہنماؤں نے کہا کہ یہ کالا قانون ہے اسے کسی صورت نافذ نہیں ہونے دیں گے۔

 احتجاجی تحریک کا بھرپور انداز میں آغاز کر دیا ہے آئندہ دھرنے بھی ہوں گے اور اہم مقامات کا گھیراؤ بھی کریں گے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -