ملیر میں قبضہ مافیا کیخلاف کارروائی کی گئی ہے،مرتضیٰ وہاب 

 ملیر میں قبضہ مافیا کیخلاف کارروائی کی گئی ہے،مرتضیٰ وہاب 

  

کراچی(سٹاف رپورٹر) سندھ حکومت کے ترجمان مشیر قانون، ماحولیات و ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا ہے کہ ملیر میں کسی سیاسی رہنما نہیں بلکہ قبضہ مافیا کے خلاف کارروائی کی گئی ہے حلیم عادل شیخ کو اس کارروائی پر سیخ پا ہونے کے بجائے تعریف کرنی چاہئیے، سیاسی جماعتیں نہیں بلکہ فرد غلط ہوتے ہیں ملیر سمیت شہر کے مختلف علاقوں میں تجاوزات کے خلاف آپریشن جاری ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز کڈنی ہل کے دورے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کڈنی ہل پارک میں تجاوزات کے خلاف آپریشن کا جائزہ بھی لیا بیرسٹر مرتضی وہاب نے مزید کہا کہ میڈیا کے زریعے معلوم ہوا کہ ضلع ملیر میں تجاوزات کے خلاف کارروائی کی گئی ہے اگر پنجاب میں تجاوزات کے خلاف کارروائی ہوتی ہے تو اپویشن اسکی تعریف کرتی ہے سندھ میں تجاوزات کے خلاف کارروائی ہوتی ہے تو الزام تراشی کی جاتی ہے کیا یہ کارروائی حلیم عادل شیخ کے خلاف ہوئی ہے؟ کارروائی تو ان کے خلاف ہوئی جن کی لیز کینسل ہوچکی ہے سرکاری زمینیں واگزار کرائی جائینگی حلیم عادل شیخ کو اس کارروائی کی تعریف کرنی چاہئے افسوس ہے کہ قانون شکنی کی جارہی ہے اگر کسی نے کارروائی میں رکاوٹ کی ہے تو اس کے خلاف کارروائی کی جائے گی انہوں نے کہا کہ کڈنی ہل سے تجاوزات کا خاتمہ کیا گیا دوہرا معیار نہیں ہوسکتا کہ لاہور میں کارروائی ہو تو درست اور کراچی میں ہوں تو غلط حلیم عادل شیخ نے الیکشن کمیشن میں زمین ڈکلیئر نہیں کی ہے کاروائی کسی ایک فرد کے خلاف نہیں کی گئی ہے یہ مان لیں کہ یہ زمین ان کی ہے تو ہم الیکش کمیشن سے رجوع کریں گے انہوں نے کہا کہ پولٹری مقاصد کے لئے یہ زمین دی گئی تھی لیز ختم کردی گئی 2015 سے ان کی لیز ختم ہوچکی ہے اگر کڈنی ہل سے تجاوزات کا خاتمہ ہو سکتا ہے تو گڈاپ سے کیوں نہیں ہو سکتا عمران خان نے اعلان کیا تھا کہ دو نہیں ایک پاکستان، بیرسٹر مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ زاتی مفادات کے لئے سرکاری کا استعمال کرنے پر کیوں جس طرح ان کی چیخیں نکل رہی ہیں کیا یہ ان کی بے نامی پراپرٹی تو نہیں ہے 

مزید :

صفحہ اول -