ڈیرہ ریجن: جرائم پیشہ عنصر کا گھیرا تنگ‘ سینکڑوں گرفتار‘ کروڑوں کی ریکوری

 ڈیرہ ریجن: جرائم پیشہ عنصر کا گھیرا تنگ‘ سینکڑوں گرفتار‘ کروڑوں کی ریکوری

  

ڈیرہ غازی خان(سٹی رپورٹر)آر پی او فیصل رانا کی پروفیشنل کمانڈ کے150دنوں میں ریجن کے چاروں اضلاع میں 9کروڑ 10لاکھ 6سو روپے کی ریکارڈ ریکوری ہوئی، 3 ہزار 263 خطرناک اشتہاری ملزمان اور ڈکیت گینگسٹرز گرفتار کئے گئے، تفصیلات کے مطابق ریجنل پولیس آ فیسر ڈی  آئی جی محمد فیصل رانا کو ریجن کی پروفیشنل کمانڈ سنبھالے 150دن کا عرصہ گزر چکا (بقیہ نمبر49صفحہ 6پر)

ہے،اس مدت کے دوران فیصل رانا نے 24/7پولیسنگ کا اس انداز میں پروموٹ کیا کہ چاروں اضلاع ڈی جی خان،مظفر گڑھ،لیہ اور راجن پور میں کرائم کی شرح انتہائی کم جبکہ ریکوری کی شرح کئی سو گنا زیادہ ہوئی،150دنوں کی قلیل مدت میں ریجن کے چاروں اضلاع میں 3ہزار263خطرناک اشتہاری ملزمان،ڈکیت گینگسٹرز،قاتل اور اغواء برائے تاوان کے ملزمان گرفتار ہوئے،اسی کم مدت میں پولیس نے گرفتار ڈکیت گینگوں سے 9کروڑ10لاکھ 6سو روپے کی ریکوری کی جو اس ریجن میں 150دنوں کی ایک ریکارڈ ہے،آر پی او کی مسلسل مانیٹرنگ کی وجہ سے جنوبی پنجاب کے معاشرتی امن کے لئے خطرہ بننے کی عالمی بدنامی رکھنے والے ”لادی“ ڈکیت گینگ کا سرغنہ شبیر عرف شبیرا ”لادی“ اور اس کے کارندے پولیس مقابلوں میں اپنے ساتھیوں کی فائرنگ سے ہلاک ہوئے جسے عوامی حلقے پولیس کے بروقت ریسپانس کا نتیجہ قرار دیتے ہیں،چند روز قبل راکٹ لانچر اور ہینڈ گرنیڈ ماسٹر شبیر عرف شبی نکانی اور اس کے 2ساتھیوں کی ہلاکت کو عوام کے منتخب نمائندے،وکلاء،دانشور،علماء اور سول سوسائٹی کے افراد پولیس کی ایسی کامیابی قرار دیتے ہیں جس کی وجہ سے ڈی جی خان بڑی تباہی سے بچ گیا کیوں کہ ساتھیوں کی فائرنگ سے ہلاک ہونے والے ملزمان پہاڑوں پر ”لادی“ گینگ کے بچے کھچے کارندوں کو راکٹ لانچر اور ہینڈ گرنیڈ سمیت خود کار ہتھیار پہنچانے جا رہے تھے،مطلوبہ افراد کو یہ اسلحہ پہنچ جاتا تو بڑی تباہی کے خدشات خارج از امکان نہیں تھے، آر پی او فیصل رانا نے سنگین وارداتوں کے ہو جانے پر جائے وقوعہ پر عارضی کیمپ آفس بنانے کے پروفیشنل پولیسنگ آپشن کا استعمال کیا جس سے ڈکیتی کے دوران قتل کی سنگین وارداتیں ٹریس ہوئیں جن میں ضلع لیہ میں سونے چاندی کے2تاجروں کے ڈکیتی کے دوران قتل کی واردات کا ٹریس ہونا،ملزمان کی گرفتاری اور کروڑوں روپے مالیت کے سونا چاندی کی بر آمدگی کو عوام مثال و تمثیل سے یاد کررتے ہیں۔

ریکوری

مزید :

ملتان صفحہ آخر -