’اوپن بیلٹ آرڈیننس کی مخالفت نے پی ڈی ایم کی تاجرانہ ذہنیت قوم پر آشکار کردی‘

’اوپن بیلٹ آرڈیننس کی مخالفت نے پی ڈی ایم کی تاجرانہ ذہنیت قوم پر آشکار ...
’اوپن بیلٹ آرڈیننس کی مخالفت نے پی ڈی ایم کی تاجرانہ ذہنیت قوم پر آشکار کردی‘

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) معاون خصوصی وزیر اعلی پنجاب ڈاکٹر فردوس عاشق نے کہا ہے کہ عوام کے مسترد کردہ کرپٹ سیاسی عناصر انفرادی طور پر بھی ناکام تھے ،اب نام نہاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ( پی ڈی ایم) میں اجتماعی طور پر بھی ناکام ہی رہیں گے، اوپن بیلٹ آرڈیننس کی مخالفت کر کے سینیٹ الیکشن میں پی ڈی ایم نے اپنی تاجرانہ ذہنیت قوم پر آشکار کر دی ہے،اب پاکستانیوں کے سامنے ان کا ذاتی مفاد کا ایجنڈہ مکمل طور پر ایکسپوز ہو جائے گا، ووٹوں کی منڈی لگانے والوں کو ایک بار پھر مایوسی کا سامنا کرنا پڑیگا۔

تفصیلات کے مطابق مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پر ٹویٹس کرتے ہوئےڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نےکہا کہ سینیٹ الیکشن اوپن بیلٹ سے کرانےکیلئے جاری صدارتی آرڈیننس سپریم کورٹ کی رائے سے مشروط ہے, عدالت عظمی کے احکامات کی روشنی میں ہی سینیٹ انتخابات کا لائحہ عمل بنایا جائےگا, صدارتی آرڈیننس پر بلاجواز تنقید کرنے والے چائے کی پیالی میں طوفان لانے کی کوشش کررہے ہیں,سینیٹ الیکشن میں پیسے کی ریل پیل اور بولیاں لگاکر ووٹ خریدنے کا داعی کرپٹ پی ڈی ایم ٹولہ بالعموم اور پیپلز پارٹی بالخصوص اس فرسودہ سیاسی مشق کا راستہ روکنے کی بجائے اسے پروان چڑھانے پر بضد ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کو جنوری میں گھر بھیجنے کی بھڑکیں مارنے والی جعلی راجکماری خواب میں بھی عمران خان کے نام سے ہڑ بڑانے لگتی ہے،عمران خان ناصرف حکومتی آئینی مدت پوری کرینگے بلکہ عوامی اعتماد کے ساتھ 2023ء میں بھی وزیراعظم منتخب ہوکر مفاد پرستی کی سیاست کو ہمیشہ ہمیشہ کیلئے دفن کرینگے۔

معاون خصوصی نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار صوبہ بھر میں یکساں ترقی کے کیلئے پرعزم ہیں اور حکومت صوبے کے پسماندہ علاقوں کی ترقی پر خصوصی توجہ دے رہی ہے،بزدار حکومت نے راجن پور کی تعمیر و ترقی کے لئے 15ارب روپے کے تاریخی پیکیج کا اعلان کیا ہے، راجن پور میں یونیورسٹی قائم کی جائے گی جبکہ ترقیاتی پیکیج میں گرلز ڈگری کالج روجھان، ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال میں ٹراما سنٹر، فاضل پور اور کوٹ مٹھن میں ریسکیو 1122 سنٹر، داجل اور فاضل پور کے رورل ہیلتھ سنٹرز کی اپ گریڈیشن بھی شامل ہے۔

انہوں نے کہا کہ 300ملین روپے لاگت سے 34ویٹرنری کلینکس،400 ملین سے سیوریج، ڈرینج سسٹم کی بحالی کا کام مکمل کیا جائے گا جبکہ تحصیل کمپلیکس روجھان کیلئے 80ملین، 16ملین لاگت کے جنرل بس سٹینڈ، 88ملین کی لاگت کے لائیوسٹاک سروسز ٹریننگ سنٹر فاضل پور،رکھ عظمت والا جام پور کے لئے کنٹینر کلینک بھی قائم کیا جا رہا ہے۔

معاون خصوصی نےکہاکہ مدراینڈ چائلڈ ہسپتال، جام پور سے کشمور دو رویہ سڑک،دیگر سڑکوں کی تعمیر و مرمت سمیت مورنج ڈیم کی تعمیر اور دیگر کئی اہم منصوبے راجن پور کے عوام کا معیار زندگی بہتر بنانے میں معاون ثابت ہونگے،راجن پور کو سابقہ حکومتوں نے جان بوجھ کر ترقی کے حق سے محروم رکھا مگر وزیراعلی عثمان بزدار دور دراز علاقوں میں جاکر عوام کے مسائل جاننے اور انکے حل کرنے کیلئے دن رات کوشاں ہیں۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -