سینیٹر شبلی فراز  نے اوپن بیلٹ پر اعتراض کرنے والی اپوزیشن جماعتوں پر سنگین الزام عائد کردیا 

سینیٹر شبلی فراز  نے اوپن بیلٹ پر اعتراض کرنے والی اپوزیشن جماعتوں پر سنگین ...
سینیٹر شبلی فراز  نے اوپن بیلٹ پر اعتراض کرنے والی اپوزیشن جماعتوں پر سنگین الزام عائد کردیا 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فرازنےکہاہے کہ جو الیکشن میں پیسہ استعمال کرنا چاہتے ہیں ،ان کو اوپن بیلٹ پر اعتراض ہے، اپوزیشن والے جمہوری لوگ نہیں،  اپوزیشن چاہتی ہے کہ سینیٹ الیکشن میں ووٹوں کی خریدو فروخت جاری رہے۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ جب انتخابات کے شیڈول کا اعلان کر دیا جاتا ہے تو اس کے بعد کوئی قانون سازی نہیں ہو سکتی،  آئینی ترمیمی آرڈیننس مشروط ہے، اگر سپریم کورٹ کہتی ہے کہ انتخابات کے لئے آئینی ترمیم کی ضرورت ہے تو انتخابات  خفیہ رائے شماری   کے ذریعے ہونگے ، اگر سپریم کورٹ کی طرف سے کوئی جواب نہیں آتا تو تب بھی انتخابات  خفیہ رائے شماری کے ذریعے ہی ہونگے ، اگر سپریم کورٹ کہتی ہے کہ آرڈیننس کے ذریعے آئین میں ترمیم کی جا سکتی ہے تو  سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ کے ذریعے ہونگے۔

انہوں نے کہا کہ ہر حکومت کے پاس انتخابات پر اثر انداز ہونے کے وسائل ہوتے ہیں لیکن ہم نے ایسا نہیں کیا، اوپن بیلٹ کے خلاف صرف وہ لوگ ہیں جو چاہتے ہیں کہ لوگ ضمیربیچتے رہیں، اپوزیشن کا ایمان صرف پیسہ ہے، یہ لوگ صرف اپنے مفاد کی بات کرتے ہیں۔سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ سپریم کورٹ پر کوئی دباؤ نہیں ڈال سکتا،پارلیمنٹ قانون بناتی ہے، عدالت اس کی تشریح کرتی ہے ،ہمارا حق ہے کہ ہم اس سے متعلق عدالت سے رہنمائی لیں۔

مزید :

قومی -