رواں سال 4 ملین ٹن آلوکی پیداوار متوقع ہے:۔ وزارت نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ریسرچ

رواں سال 4 ملین ٹن آلوکی پیداوار متوقع ہے:۔ وزارت نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ...

اسلام آباد (اے پی پی) رواں سال 4 ملین ٹن آلوکی پیداوار متوقع ہے ۔ رواں سال 2لاکھ ٹن سے زائد آلو برآمد کیا جائے گا۔ آلو کی نئی پیداوار کے مقامی منڈیوں میں پہنچنے کے ساتھ ہی برآمد کنندگان نے برآمدی آرڈرز کے حصول کیلئے کاوشیں تیز کردیں ۔ گزشتہ ماہ دسمبر کے صرف آخری دو ہفتوں کے دوران 10 ہزار ٹن آلو برآمد کئے گئے جبکہ برآّمد کنندگان نے کہا ہے کہ ان کے پاس جنوری میں 30 ہزار ٹن آلو کی برآمد کے آرڈرز ہیں ۔ برآمد کنندگان نے کہا ہے کہ روس پاکستانی آلو کا بڑا درآمد کنندہ ہے اور روس کو آلو کی برآمدات کے فروغ کے حوالے سے اعلیٰ سطح کے وفد نے روس کا دورہ کر کے روسی حکام سے کامیاب مذاکرات کئے ہیں ۔ وزارت نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ریسرچ کی رپورٹ کے مطابق رواں سال آلو کی پیداوار 4 ملین ٹں متوقع ہے جبکہ 2012ءمیں آلو کی مقامی پیداور 3.5 ملین ٹن رہی تھی۔ گزشتہ چند سالوں کے دوران ملک میں آلو کی پیداوار میں خاطر خواہ اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے اور مقامی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے مقامی آلو کی پیداوار ہی کافی ہوتی ہے جبکہ ضرورت سے زائد آلو برآمد کرکے قیمتی زرمبادلہ بھی کمایا جاتا ہے ۔

۔ زرعی ماہرین کا کہنا ہے کہ آلو کی ملکی پیداوار میں اضافہ کی بنیادی وجاہات آلو کے زیر کاشت رقبہ اور فی ایکڑ پیداوار میں اضافہ ہے انہوں نے کہا کہ آلو کی پیداوار کو فروغ دیکر برآمدات کو بڑھا کر قیمتی زرمبادلہ حاصل کرکے ملکی معیشت مستحکم کی جاسکتی ہے۔ جبکہ اقتصادی ماہرین نے کہا ہے کہ برآمدات کے فروغ کیلئے غیر روایتی منڈیوں تک رسائی کے عمل کو یقینی بنانے کی ضرورت ہے۔

مزید : کامرس


loading...