72ساتھیوں کی بحالی کیلئے پی ایچ اے ملازمین کی ہڑتال : دفاتر کی تالہ بندی

72ساتھیوں کی بحالی کیلئے پی ایچ اے ملازمین کی ہڑتال : دفاتر کی تالہ بندی

  

 لاہور(اقبال بھٹی) پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی کے نکالے گئے170ملازمین کو بچانے کیلئے سی بی اے (یونین) میدان میں آ گئی ہے۔ یونین نے مسلسل ہڑتال او ر دفتروں کی تالا بند کرا دی ، انتظامیہ نے نرم گوشہ ظاہر کرتے ہوئے مذاکرات پرآمادگی ظاہر کر دی ۔تفصیلات کے مطابق پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی نے تجربے کے طور پرپہلے فیز میں پارکس اینڈ سڑکوں کی گرین بیلٹ کے کچھ حصے پرائیویٹ لوگوں کو ٹھیکے پر دے دیئے جس وجہ سے 170ملازمین کو نوکریوں سے فارغ کر دیا تھا۔پی ایچ اے ذرائع کے مطابق جس حصے کو پرائیویٹ کیاجا رہا ہے وہاں پر ملازمین کی اب کوئی ضرورت نہیں ہے اس لئے ان ملازمین کو نوکریوں سے نکالا گیا ہے جبکہ ملازمین کا کہنا ہے کہ ایک عرصہ سے کام کر رہے ہیں اور زندگی کا قیمتی حصہ محکمہ میں گزار چکے ہیں اس کے باوجود محکمہ سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا جارہا ہے ہم میں سے کچھ لوگ ریٹائرمنٹ کے قریب ہیں اور سب کی سروس 10سال سے زیادہ ہے اس وقت ہم لوگ کہاں جائیں اور بال بچوں کا پیٹ کیسے پالیں ۔اس حوالے سے سی بی اے یونین کے جنرل سیکرٹری حافظ ابرار احمد کا کہنا ہے کہ ملازمین کو نوکریوں سے نکالنا مزدور دشمنی ہے اس لیے حکومت سے گزارش ہے کہ فیصلے واپس لے ۔جب پوچھا گیا کہ آپ اس حوالے سے کیا اقدامات کر رہے ہیں اس پر انہوں نے کہا کہ ہماری یونین ابتدائی طور پر اس فیصلے کے خلاف احتجاج کر رہی ہے اور دفتروں میں تالا بندی کر رکھی ہے ہمیں انتظامیہ کی طرف سے مذاکرت کی دعوت ملی ہے امید ہے کہ اتھارٹی کو قائل کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -