طیبہ دو سال پہلے اغوا ہوئی ، اصل نام ثنا ہے ، پولیس اغواکرنے والوں سے مل گئی تھی

طیبہ دو سال پہلے اغوا ہوئی ، اصل نام ثنا ہے ، پولیس اغواکرنے والوں سے مل گئی ...

  

کمالیہ ( محمد نعیم خان سے) طیبہ تشدد کیس نیاء رخ اختیار کر گیا تشدد کا شکار ہونے والی طیبہ کا اصل نام ثناء ہے جو دو سال قبل رشتہ داروں کو ملنے کے لیے اپنے والدین کے ساتھ فیصل آباد گئی اور وہاں سے اغواء ہو گئی تھی جس کا مقدمہ فیصل آباد کے تھانہ میں درج ہوا تھا مختلف ٹی وی چینلز پر تصویریں دیکھیں تو والدہ سمیت اہل خانہ اور رشتہ داروں نے طیبہ کو پہچان لیا یعنی ثناء کو پہچان لیا تفصیل کے مطابق عرصہ دو سال قبل 7سالہ ثناء اپنے والد محمد نواز کے ہمراہ فیصل آباد رشتہ داروں کو ملنے گئے تو ملزمہ قمر بی بی ،شہناز ، رشید اور اسامہ نے ساز باز کر کے ثناء کو اغوا کر لیا اور جواز یہ پیش کیا کہ وہ گھر سے فرار ہو گئی ہے جس کا ہائی کورٹ لاہور کے حکم پر اغواء کا مقدمہ درج ہوا تھا لیکن دوران تفتیش ملزمان کے با اثر ہونے کی وجہ سے کوئی شنوائی نہ ہوئی متاثرہ خاتون کوثر بی بی نے بتایا کہ گزشتہ روز جب اثانک طیبہ تشدد کیس اسلام آباد مختلف ٹی وی چینلز پر نشر ہوا تو کئی رشتہ داروں نے کوثر بی بی کو بتایا کہ ان کی بیٹی ثناء کی تصاویر ٹی وی چینلز پر آرہی ہیں۔تصدیق کے لئے والدین خود پہنچے تو بیٹی کا تشدد زدہ چہرہ دیکھ کران پر صدمہ طاری ہو گیا۔ کوثر بی بی نے وزیر اعظم نواز شریف ،چیف جسٹس ، اور وزیر اعلی پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ ان کی بیٹی ثناء کو فوری ان کے حوالے کیا جائے ۔

مزید :

صفحہ اول -