پنجاب کو تھیلسیمیاسے پاک کرنے کیلئے اقدامات کررہے ہیں،سلمان رفیق

پنجاب کو تھیلسیمیاسے پاک کرنے کیلئے اقدامات کررہے ہیں،سلمان رفیق

  

لاہور(جنرل رپورٹر) صوبائی وزیر برائے سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن خواجہ سلمان رفیق نے کہا کہ پنجاب کو تھیلسیمیاسے پاک کرنے کے لئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں اور اس مقصد کے لئے پنجاب تھیلسیمیا پریوینشن اتھارٹی کے قیام کا فیصلہ کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ پنجاب تھیلسیمیاپریوینشن پروگرام کو اس مقصد کے لئے تیزی سے اقدامات اٹھانے کی ہدایت کر دی گئی ہے۔انہوں نے یہ بات صوبے میں تھیلسیمیاکی روک تھام کے لئے پنجاب تھیلسیمیاپریوینش پروگرام کی کارکردگی کا جائزہ لینے اور پروگرام کو مزید مستحکم کرنے کے سلسلہ میں اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔اجلاس میں سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن نجم احمد شاہ،وائس چانسلر FJMUپروفیسر ڈاکٹر فخر امام،سپیشل سیکرٹری ہیلتھ ڈاکٹر ساجد چوہان ،ایڈیشنل سیکرٹری ہیلتھ ڈویلپمنٹ مسرت جبین،پراجیکٹ ڈائریکٹر PTPPڈاکٹر شبنم بشر اور دیگر افسران نے شرکت کی۔اجلاس کو بتایا کیا کہ تھیلسیمیاکی روک تھام کا پروگرام24اضلاع میں کام کررہا ہے۔اس کو 36اضلاع تک وسعت دی جارہی ہے۔ڈاکٹر شبنم بشر نے بتایا کہ تھیلسیمیاسے بچاؤ کے لئے شادی سے پہلے لڑکی اور لڑکے کا تھیلسیمیاٹیسٹ کرانے کی ترغیب کے سلسلہ میں کونسلنگ پروگرام بھی جاری ہے اور Pre-natalسکریننگ کی سہولت فراہم کی جارہی ہے جبکہ DNAٹیسٹ اور ہیماٹولوجی لیبارٹری بھی قائم کر دی گئی ہے۔صوبائی وزیر نے کہا کہ تھیلسیمیاکی روک تھام کے لئے بھرپور عوامی آگاہی مہم کی ضرورت ہے جس میں ایم پی اے اور ایم این اے کے علاوہ بلدیاتی نمائندوں کو بھی شامل کیا جائے جو مقامی سطح پر موثر کردار ادا کر سکتے ہیں۔سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر نجم احمد شاہ نے اس موقع پر ایک ریفارمز کمیٹی وائس چانسلر FJMUپروفیسر سردار فخر امام کی سربراہی میں تشکیل دینے کی ہدایت کی جو پنجاب تھیلسیمیاپریوینشن اتھارٹی کے قیام کے سلسلہ میں ایکٹ کی تیاری اور دیگرTORsکا ڈرافٹ تیار کرکے ایک ہفتہ میں پیش کرے گی۔

مزید :

صفحہ آخر -