نامکمل فائل سے ملزمان کا بچ نکلناسسٹم پر بڑا سوالیہ نشان ہے،ہائیکورٹ

نامکمل فائل سے ملزمان کا بچ نکلناسسٹم پر بڑا سوالیہ نشان ہے،ہائیکورٹ

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ مسٹر جسٹس چودھری عبدالعزیز نے ڈکیتی کے گرفتار ملزمان کی شناخت پریڈکو یقینی بنانے کا حکم دیتے ہوئے قرار دیا ہے کہ نظام کی تباہی پر افسوس کے سوا کچھ نہیں کیا جا سکتا۔ عدالتی حکم پر ایڈیشنل آئی جی لیگل کامران عادل عدالت میں پیش ہوئے تو عدالت نے قرار دیا کہ ڈکیتی اور حساس نوعیت کے مقدمات میں شناخت پریڈ کا عمل مکمل نہ ہونے سے ملزمان کو فائدہ پہنچ رہا ہے، پولیس کی نامکمل فائل سے ملزمان بچ نکلتے ہیں جوسسٹم پر بہت بڑا سوالیہ نشان ہے۔عدالت نے کہا کہ نظام کی تباہی پر افسوس کے سوا کچھ نہیں کیا جا سکتا۔جس پر ایڈیشنل آئی جی کامران عادل نے عدالت کو یقین دہانی کرائی کہ غفلت کے مرتکب پولیس اہلکاروں کے خلاف کاروائی کی جائے گی اور شناخت پریڈ کے قانونی عمل کو یقینی بنایا جائے گا۔فاضل جج نے یہ حکم ایک شہری کی طرف سے دائر درخواست پر جاری کیا جس میں کہا گیا ہے کہ پولیس ڈکیتی کے ملزموں کی گرفتاری کے بعد ان کی شناخت پریڈ نہیں کراتی جس کے باعث استغاثہ کا کیس کمزور ہوجاتا ہے ۔

بڑا سوالیہ نشان

مزید :

صفحہ آخر -