لاپتہ دوشیزہ کی تفتیش کا ریکارڈ غائب کرنے پر ڈی پی او جھنگ طلب

لاپتہ دوشیزہ کی تفتیش کا ریکارڈ غائب کرنے پر ڈی پی او جھنگ طلب

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )پولیس نہ صرف 3سال قبل لاپتہ ہونے والی جواں سال لڑکی کو بازیاب کروانے میں ناکام رہی بلکہ تفتیش کا ریکارڈ بھی غائب کردیاجس کا سخت نوٹس لیتے ہوئے لاہورہائیکورٹ مسٹر جسٹس چودھری عبدالعزیز نے ڈی پی او جھنگ کو 16جنوری کو وضاحت کے لئے طلب کر لیاہے۔فاضل عدالت نے قرار دیا کہ پولیس کی کارکردگی کا یہ عالم ہے کہ تین سالوں میں یہ پتہ نہیں لگایا جا سکا کہ بچی زندہ بھی ہے یا نہیں،الٹا کیس کا ریکارڈ بھی غائب کر دیا۔درخواست گزار انور نے عدالت کو بتایا کہ تین سال قبل لاپتہ ہونے والی اس کی بیٹی کو پولیس تاحال بازیاب نہیں کروا سکی ۔درخواست گزار نے الزام عائد کیا کہ پولیس ،مقامی بااثرسیاسی شخصیت کی ملی بھگت سے اسے مقدمہ واپس لینے اور قانونی کاروائی سے باز رہنے کے لئے مسلسل دباؤ ڈال رہی ہے۔تفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ سابق تفتیشی کی جانب سے ضمنیاں اور دیگرریکارڈ ٹرائل عدالت میں لے جاتے ہوئے گم ہوگیا تھا۔

مزید :

صفحہ آخر -