کشمیری بھاتی جبر کے شکار ہیں ،داستانیں دردناک ہیں،گمنام خبریں بن رہی ہیں:رضا ربانی

کشمیری بھاتی جبر کے شکار ہیں ،داستانیں دردناک ہیں،گمنام خبریں بن رہی ...

  

اسلام آباد(آن لائن) چیئرمین سینٹ رضا ربانی نے کہا ہے کہ کشمیری بھا رتی جبر کے شکار ہیں ،داستانیں درد ناک ہیں ، گمنام خبریں بن رہی ہیں ، کشمیری زندہ لاشیں اور جنت میں جہنمی ہیں ، اقوام عالم خاموش تماشائی بن گئی ہے ، اقوام متحدہ مغرب کی آلہ کار اور اس کی قراردادیں کوڑا دان میں پڑی ہیں ، او آئی سی درحقیقت او آئی سی ہے کشمیری مقدمہ لڑنے میں ناکام ہیں ، کشمیر کمیٹی میں سینیٹرز کو شامل کرکے مقدمہ پارلیمنٹ کو لڑنا چاہیے ۔ جمعہ کو اسلام آباد میں مقبوضہ کشمیر پر بین الاقوامی پارلیمنٹرینز کی منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین سینٹ کا کہنا تھا کہ کشمیری عوام پر بھارتی مظالم حد سے بڑھ رہے ہیں بے چارے کشمیریوں پر بھارتی افواج کی ظلم کی داستانیں انتہائی کرب ناک ہیں دنیا کی بڑی جمہوریت کے دعویدار کشمیری نوجوانوں پر بیلٹ گنز پھینک کر نابینا بنا رہے ہیں لیکن دنیا کی غیرت جاگنے کا نام نہیں لے رہی اور عالمی اداروں کی بھارتی مظالم پر بے حسی اب ہمارے لئے کوئینئی بات نہیں کیونکہ وہ بے شرمی کے جھولے میں جھول رہے ہیں انہوں نے کہا کہ کشمیر میں غیر ریاستی ہندوؤں کو بسا کر کشمیریوں کی حریت اور ان کی آزادی کو پاؤں تلے روندا جارہا ہے لیکن انسانی حقوق کا درس دینے والی نام نہاد تنظیموں نے اس ظلم پر خاموش تماشائی بن کر آنکھیں بند کررہی ہیں چیئرمین سینٹ نے کہا کہ آزادی کشمیریوں کا حق ہے لیکن ہم کشمیر کے مسئلے کو عالمی مسئلے کی طرح نہیں اٹھا سکے ہمارے کمزور کیس کی وجہ سے اقوام متحدہ کی کشمیر پر قراردادیں کوڑا دان کی نظر ہوگئیں اقوام متحدہ مغربی ریاستوں کی آلہ کار بن چکی ہیں اور ان کے مفادات کو تحفظ دینے کے لئے باقی دنیا کو قربانی کا بکرا بنا رہی ہے انہوں نے کہا کہ اسلامی ممالک کی تنظیم او آئی سی درحقیقت او آئی سی میں تبدیل ہوگئی ہے اور کشمیر کے علاوہ دیگرمسلمان ممالک میں بھی مسلمان ذلیل و خوار ہورہے ہیں لیکن ان کے حقوق کی بات کرنے والا کوئی نمائندہ پلیٹ فارم نہیں جو اس بات کا ثبوت ہے کہ عالمی سطح پر مسلمانوں کی بدنامی اور ان پر مظالم کے ساتھ ان کی جگ ہنسائی دراصل ہماری اپنی نااہلی ہے جس کی وجہ سے مفادات ٹولہ ہمیں ہر طرف سے نشانہ بنا رہا ہے لیکن ان مظالم پر عالمی اداروں کی خاموشی اور بے حسی ہمارے لئے کوئی نئی بات نہیں کیونکہ وہ آلہ کار بن کر مخصوص ممالک کے مفادات کو تحفظ دینے میں مصروف ہیں چیئرمین سینٹ رضا ربانی نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ پاکستان کوہی حل کرنا ہے یہ تلخ حقیقت اپنی جگہ کہ آج تک ہم یہ مقدمہ مضبوط دلائل کے ساتھ پیش کرنے میں ناکام ہوئے ہیں لیکن وقت اب بھی ہے اور بہتر یہ ہے کہ کشمیر کمیٹی میں سینٹ کے ارکان کو شامل کرکے یہ مقدمہ پاکستان کی پارلیمنٹ سے پرزور انداز میں لڑنا چاہیے جس کے نتیجے میں آزادی کشمیر عوام کا مقدر بنے اور بھارتی مظالم سے ہمیشہ کیلئے چھٹکارا مل جائے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -