چشتیاں کے قریب مبینہ پولیس مقابلہ‘ زیادتی، قتل مقدمات میں ملوث ملزم بلاک

چشتیاں کے قریب مبینہ پولیس مقابلہ‘ زیادتی، قتل مقدمات میں ملوث ملزم بلاک

  

چشتیاں،بہاولنگر(نمائندہ پاکستان،ڈسٹرکٹ رپورٹر)ماڈل تھانہ صدر کے علاقہ چک چوپہ کے قریب مبینہ پولیس مقابلہ کے دوران زیادتی اور قتل کے مقدمات میں ملوث مظفر گڑھ کا رہائشی خطرناک ملزم فائرنگ کے تبادلہ کے دوران اپنے ہی ساتھیوں کی فائرنگ سے ہلاک ہو گیا ۔(بقیہ نمبر16صفحہ12پر )

پولیس کے مطابق ماڈل تھانہ صدر میں درج قتل اور زیادتی کے مقدمات میں ملوث سفاک ملزم غلام یٰسین کو پولیس کی حراست میں پنجاب فرائزک سائنس ایجنسی لاہور سے ڈی این اے ٹیسٹ کروا کر واپس چشتیاں آ رہے تھے کہ بستی ظہیر آباد کے قریب پہنچ کر ملزم نے پیشاب کرنے کا بہانہ بنا کر گاڑی کو رکوایا اور بعد میں اہلکار سے سرکاری رائفل چھین لی اور پیچھے سے آنے والے اپنے مسلح ساتھیوں کے ہمراہ پولیس اہلکاروں پر اسلحہ تان کر موٹر سائیکل پر فرار ہو گئے اس واقعہ کے بعد سرکل پولیس چشتیاں میں بذریعہ وائر لیس ناکہ بندی کر لی گئی اور چک چوپہ کے علاقہ میں ملزمان اور پولیس کا آمنا سامنا ہو گیا ۔دونوں اطراف سے فائرنگ شروع ہوئی فائرنگ کے تبادلہ کے دوران ملزم غلام یٰسین اپنے ساتھیوں کی فائرنگ کی زد میں آکر مارا گیا ۔ یاد رہے کہ ملزم غلام یٰسین نے گزشتہ ماہ دانش سکول کی ملازمہ کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کر کے نعش کو قریبی کھیتوں میں پھینک دیا تھا ۔ ملزم غلام یٰسین دیگر زیادتی اور قتل کے مقدمات میں بھی ملوث تھا ۔ صدر پولیس نے نعش کو قبضہ میں لے کر کاروائی شروع کر دی ہے ۔

پولیس مقابلہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -