ایف پی سی سی آئی کے نو منتخب ریجنل چیئرمین عرفان یوسف نے چارج سنبھال لیا

ایف پی سی سی آئی کے نو منتخب ریجنل چیئرمین عرفان یوسف نے چارج سنبھال لیا

لاہور( کامرس رپورٹر)ایف پی سی سی آئی کے نو منتخب ریجنل چےئرمین و نائب صدر حاجی عرفان یوسف نے ایف پی سی سی آئی ریجنل آفس کا چارج سنبھال لیا،نومنتخب عہداداروں کے اعزاز میں خصوصی تقریب ایف پی سی سی آئی ریجنل آفس لاہور میں ہو ئی۔ سارک چیمبر کے نائب صدر و یوبی جی کے چےئرمین افتخار علی ملک نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔ تقریب میں ایف پی سی سی آئی نائب صدر کریم عزیز ملک ،شبنم ظفر،مےئر گجرات حاجی ناصر محمود،سیالکوٹ چیمبر کے گروپ لیڈر ریاض الدین شیخ،ڈاکٹر نعمان ادریس بٹ ،ضرار احمد ڈھو ڈی ،ملک نصیر ،فیصل بر لاس ،رانا نصیر،ندیم عبد اللہ ، مرزا عبد الر حمن ،اخلاق احمد بٹ،خواجہ ضرار کلیم،امجد چوہدری ، راجہ حسن اختر ،عظمت چوہدری ،پیر ناظم شاہ ،ویمن چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی سابق صدر شازیہ سلیمان سمیت پاکستان بھر کی کاروباری برادری نے شرکت کی۔نومنتخب ریجنل چےئرمین چوہدری عرفان یوسف پریس کانفرنس میں رواں سال کا روڑ میپ دیتے ہوئے کہاکہ پنجاب کے ہر ضلع سے متعلق اور چیمبرز کے مسائل کے حل کیلئے 23جنوری کو ایف پی سی سی آئی کنونشن2018 کا انعقاد لاہور میں کیا جا رہا ہے۔گورنمنٹ کو بھی سوچنا ہو گا کہ کاروباری برادری کو اعتماد میں لیے بغیر پالیسیز کامیاب نہیں ہو سکتی۔بزنس کمیونٹی اور متعلقہ اداروں کے مابین رابطوں کو مزید بہتر بناتے ہوئے بزنس کمیونٹی کے مسائل حل کرنے کے لیے مختلف حکومتی اداروں کے ساتھ بزنس کمیونٹی کے اجلاس منعقد کئے جائیں گے۔ٹیکس کے نظام کو بہتر بنانے کے لئے کو ششیں اور کاروباری برادری کے ٹیکس کے مسائل کے حل کیلئے خصوصی کمیٹی تشکیل کی جائے گی جس میں ہر ایسوسی ایشن اور چیمبر کے ممبران کی نمائندگی یقینی بنائی جائے گی۔ افتخار علی ملک نے کہا کہ ہم پاکستان میں اکنامک تبدیلی لے کر آئیں ہیں اور آئندہ بھی لے کر آئیں گے۔ تاجر برادری کی ہمیں ضرورت ہے اور ہم پاکستان بھر کی تاجر برادری کو ساتھ لے کر چلیں گے اور ان کے مسائل حل کریں گے۔ اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ UBG کو کامیاب کرانے پر تمام ممبران کا شکریہ ادا کرتے ہیں اور اسی کامیابی کا نام جمہوریت ہے ۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ مجھے نہ تو سینٹ اور نہ ہی پارلیمنٹ میں کوئی سیٹ چاہئے میں گزشتہ 35 برس سے تاجر برادری کی خدمت کرتا آرہا ہوں اور آئندہ بھی کرتا رہوں گا۔ تاجر برادری کے مسائل حل کرنے کے لئے ہم ہر وقت تیار ہیں ۔عرفان یوسف نے مزید کہاکہ ایف پی سی سی آئی ہر سال بجٹ کے حوالے سے گورنمنٹ کو وفاقی اور صوبائی سطح پر تجاویز پیش کرتی ہے جن میں سے بیشتر کو بجٹ کا حصہ بنایا جاتا ہے ۔ رواں مالی سال بجٹ سے پہلے اور بعد نا صرف تمام چیمبرز اور ایسوسی ایشنز کی تجاویز لی جائیں گی بلکہ متعلقہ اداروں کو ان اجلاس کا حصہ بنایا جائے گا۔بجٹ کے حوالے سے پری بجٹ اور پوسٹ بجٹ کانفرنس کا انعقاد کر کے ٹیکس کے اداروں سے متعلقہ مسائل کے حل کے لئے مناسب حکمت عملی کی جائے گی ۔ تجارت کو فروغ دینے کے لئے بین الاقوامی روابط کو بہتر بنایا جائے گا اور مختلف ممالک کے لئے سیکٹر فوکس وفود لے جائے جائیں گے جن میں تاجر برادری کی شمولیت کو یقینی بنایا جائے گا۔ ملک میں ایس ایم ای اور مینوفیکچرنگ سیکٹر مسلسل بد حالی کا شکار ہے جس کیلئے حکومتی سطح پر پالیسی کو بہتر کرنے کی ضرورت ہے۔ صنعتی فیڈرز کی غیرا علانیہ لوڈ شیڈنگ کو مکمل طور پر خاتمہ اور کاروبار میں آسانیاں پیدا کرنے کی رینکینگ کوبہتر کرنے کیلئے اقدامات کئے جائیں گئے ۔

مزید : کامرس