پاکستان کو محبت کا نمونہ بنانے کیلئے حضور پاکؐ کا پیغام پھیلایا جائے : شہباز شریف

پاکستان کو محبت کا نمونہ بنانے کیلئے حضور پاکؐ کا پیغام پھیلایا جائے : شہباز ...

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ شہبازشریف نے کہا ہے کہ حضور پاکؐ کی زندگی کا پیغام دکھی انسانیت ،یتیموں اور بیواؤں کی خدمت ہے ،نبی پاک ؐ نے معافی اور درگزر کا پیغام بھی دیا،علمائے کرام نبی پاکؐ کے اس پیغام کو فروغ دیں تو پاکستان محبت ، ایثاراور دولت کی منصفانہ تقسیم کا نمونہ بن جائے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایوان وزیراعلی میں تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے جیدعلماء کرام کے کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعلیٰ شہبازشریف نے کہا کہ علمائے کرام اور مشائخ عظام پر قوم کی تقدیر کو سنوارنے اور اصلاح معاشرہ کی بہت بڑی ذمہ داری عائد ہوتی ہے کیونکہ علمائے کرام کی اکثریت حق اور سچ کی بات کرتی ہے اوراللہ تعالی نے علمائے کرام کو بے شمار صلاحیتو ں سے نوازا ہے۔انہوں نے کہا کہ قوم کے اندر ہیجانی کیفیت کے تدارک اور فروعی اختلافات کو ختم کرنے کیلئے علمائے کرام کا کلیدی کردار ہے اورمذہبی منافرت کے خاتمے کیلئے بھی ان کے کردار کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا تاہم پاکستان کے اندر انتشار او رہیجانی کیفیت میں کمی لانے کے لئے علماء حق کو آگے بڑھ کر ا پنا بھرپور کردار ا دا کرنا ہوگا۔ وزیراعلی نے کہا کہ گزشتہ چند دہائیوں سے مذہبی منافرت سے ملک میں جو تشویش پیدا ہوئی ہے اس کو علمائے کرام اور مشائخ عظام ہی موثر طریقے سے سلجھا سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ جید علماء کے روح پرور اجتماع سے پورے پاکستان اور دنیا میں اتحاد او ریکجہتی کا پیغام جائے گا اور مذہبی ہم آہنگی اور رواداری کو فروغ ملے گا۔ انہوں نے کہاکہ امریکی صدر نے پاکستان کو بے وفا اور سازشی کہہ کر ہمارے قومی وقار کی توہین کی ہے حالانکہ ملک کے عوام نے نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا کے امن کیلئے لازوال قربانیاں دی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہزاروں قربانیوں کو ڈالروں میں تولنے والے جان لیں ،پوری قوم اغیار کے ان ناپاک عزائم کو اتحاد کی قوت سے خاک میں ملا دے گی۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف اغیار ہماری تضحیک کررہا ہے جبکہ دوسری جانب ملک میں 2012سے شروع ہونے وا لی دھرنوں کی منفی سیاست کے ذریعے اس قبیح فعل کو تقویت دینے کی کوشش کی جا رہی ہے،وزیراعلیٰ پنجاب نے مزید کہا کہ ہم نے قربانیاں ڈالروں کے لئے نہیں بلکہ پاکستان اور دنیا کے امن کے لئے دی ہیں مگرہمیں بے وفائی کا طعنہ دیا جا رہاہے جو ہم سب کیلئے لمحہ فکریہ ہے لہٰذاسیاسی ، عدالتی و عسکری قیادت کو مل بیٹھ کر فیصلہ کرنا ہے کہ ہمیں عزت سے رہنا ہے یا ذلت کی زندگی گزارنی ہے۔ایوان وزیراعلی میں منعقد جید علماء کرام کے کنونشن میں شرکت کرنے والوں میں علامہ غلام محمد سیالوی،مولانا عبدالوہاب روپڑی ،علامہ محمد حسین اکبر،مولانا محمد امجد خان، علامہ سید ریاض حسین نجفی ، ڈاکٹر راغب حسین نعیمی، پیرمحفوظ احمد مشہدی، مولانا محب اللہ نوری، انعام الحق شاہ، حافظ اسعد عبیدالازہری، مولانا محمد عبدالمتین خان (زاہدالراشدی)، پیر سید چراغ الدین شاہ، مولانا محمد نعیم بٹ، میاں محمود عباس، سید عتیق الرحمن شاہ، مولانا عرفان اللہ ثنائی، مولانا محمد یاسین راہی، پروفیسر عبدالرحمن شارق، شفقت حسین ملک، مولانا سید آغا سبطین حیدر سبزواری، سید نو بہار شاہ، علامہ رشید ترابی، مولانا افضل حیدری اور دیگر جید علماء کرام شامل تھے۔

مزید : صفحہ اول